ڈاکٹرز،نرسزکی بائیو میٹرک حاضری کا فیصلہ غیر دانشمندانہ،پروفیسر اشرف نظامی

ڈاکٹرز،نرسزکی بائیو میٹرک حاضری کا فیصلہ غیر دانشمندانہ،پروفیسر اشرف نظامی

  

لاہور(جنرل رپورٹر)محکمہ صحت کی جانب سے تمام ڈاکٹرز، نرسز اور پیرامیڈیکس کی دوبارہ سے بائیومیٹرک حاضری لازمی قرار دینے کا فیصلہ انتہائی غیرذمہ دارانہ ہے اور یہ کرونا وبا کے پھیلاؤ کا سبب بنے گا۔ ان خیالات کا اظہار پی ایم اے لاہور کے ساتھ میڈیکل پروفیشن کی مختلف تنظیموں کے نمائندوں کے ساتھ ایک اجلاس میں کیا گیااجلاس کی صدارت صدر پی ایم اے لاہور میں پروفیسر ڈاکٹر محمد اشرف نظامی نے کی۔اجلاس میں جنرل سیکریٹری ڈاکٹر ملک شاہد شوکت،ڈاکٹر اظہار احمد چوہدری،، ڈاکٹر تنویر انور، ڈاکٹر احمد نعیم اختر، ڈاکٹرارم شہزادی، ڈاکٹر واجد علی، ڈاکٹر بشریٰ حق، ڈاکٹر سلمان کاظمی، نے شرکت کی۔پی ایم اے لاہور کے صدر پروفیسر اشرف نظامی نے کہا کہ یہ بات سمجھ سے بالا تر ہے کہ محکمہ صحت میں اس طرح کے ناعاقبت اندیش فیصلے کون کر رہا۔انہوں نے مزید کہا کہ پہلے محکمہ صحت کے سیکریٹریٹ میں عملے کو تو لامحدود چھٹیاں دی ہوئی ہیں اور وہاں کام کاج کیلئے آنے والوں کا داخلہ بند کیا ہوا ہے جبکہ ان دفتروں میں بیٹھنے والے بابو اور بیوروکریٹ تو ہر طرح سے محفوظ ہیں لیکن ڈاکٹروں اور طبی عملے کو حاضری کا پابند کیا جا رہا ہے۔ کوئی بھی دانش ور اور پڑھا لکھا آدمی اس صورتحال میں اس قسم کے فیصلے نہیں کر سکتا۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس فیصلے کو فی الفور واپس لیا جائے تاکہ کرونا کے پھیلاؤ میں حکومت حصہ دار نہ بنے۔

پروفیسر اشرف

مزید :

صفحہ آخر -