انجمن حمایت اسلام کا 39کروڑ 77لاکھ روپے کا بجٹ منظور

انجمن حمایت اسلام کا 39کروڑ 77لاکھ روپے کا بجٹ منظور

  

لاہور (نمائندہ خصوصی) انجمن حمایتِ اسلام کے صدر جسٹس منظور حسین سیال نے کہا ہے کہ کرونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن کے نتیجے میں پوری دنیا اور ملک بھر کے تمام ادارے مسائل اور بحران سے دوچار ہیں ان حالات میں بھی انجمن حمایتِ اسلام کے تعلیمی اور رفاہی ادارے ترقی کا سفر جاری رکھے ہوئے ہیں جو کہ خوش آئند ہے۔ گذشتہ روزانجمن حمایتِ اسلام کی جنرل کونسل کے ایوان نے 39کروڑ77 لاکھ روپے کا بجٹ 2020-21 منظور کر لیا۔ سیکرٹری جنرل انجمن میاں محمد منیر نے بجٹ تقریر میں کہا کہ اخراجات کا تخمینہ 29 کروڑ 83لاکھ روپے ہے۔

یہ 14لاکھ 58ہزار روپے کا فاضل بجٹ ہو گا۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ انجمن حمایتِ اسلام نے مالی سال کے بجٹ میں سافٹ ویئر ڈیویلپمینٹ کے لیے ایک ملین روپے اور آئی ٹی سنٹر کے لیے 2 ملین روپے رکھے ہیں۔

میاں محمد منیر نے کہا کہ انجمن حمایتِ اسلام کی روز افزوں ترقی صدرِ انجمن جسٹس منظور حسین سیال کی بے مثال قیادت، فنانس کمیٹی کے چیئرمین ایم ایم ملک، سیکرٹری مرزا خادم حسین جرال اور اراکین پروفیسر ڈاکٹر خالد حمید شیخ، مدثر لطیف راں اور انصار احمد قریشی کی شبانہ روز محنت اور اعلیٰ انتظامی صلاحیتوں کی مرہونِ منت ہے، تمام اراکین جنرل کونسل نے انھیں خراجِ تحسین پیش کیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -