والڈ ستی میں کاروبار کھولنے کی اجازت دی جائے:حاجی محمد حنیف

والڈ ستی میں کاروبار کھولنے کی اجازت دی جائے:حاجی محمد حنیف

  

لاہور(سٹی رپورٹر) صدر شاہ عالم مارکیٹس بورڈ حاجی محمد حنیف نے کہا ہے کہ تاجر برادری کو حکومت والڈ سٹی میں کاروبار کرنے کی اجازت دے۔ پہلے ہی کورونا وائرس سے لاک ڈاؤن کے باعث مارکیٹ بند ہونے سے تاجر برادری کا لاکھوں کا نقصان ہو چکا ہے اور مزید کاروبار بند کرنا ہمارے کاروبار کو تباہ کر نے کے مترادف ہے۔ کاروبار بند ہونے سے تاجر دکانوں کے کرائے کیسے دے گی۔ ملازمین کی تنخواہ کیسے دی جائے گی۔ حکومت اس بارے میں غوروفکر کرکے کاروبار کرنے کی اجاز ت دے تاکہ تاجر برادری اپنے اور اپنے ملازمین کے بچوں کی روٹی روزی کو پورا کر سکے۔انہوں نے پیٹرولیم مصنوعات میں اضافے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے ک حکومت اس فیصلے کو فوری واپس لے کیونکہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے زرعی شعبے کی پیداواری لاگت میں اضافہ ہوجائے گا اور تھرمل پاور جنریشن کی لاگت بھی بڑھ جائے گی جس سے صنعتی شعبے کو بہت نقصان ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے تاجروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں نعیم حنیف، چوہدری مقصود احمد جنرل سیکرٹری، چوہدری سجاد، محمد فیاض، سیٹھ فرحان شفیق،توصیف نثار، فرحان علی چوہدری، شاہدنذیر، عارف محمود،شفیق پپو، انیس یونس،ندیم سلیم،محمود الحسن ککو، اسد عثمان، محمد رضوان، ناصر محمود، حافظ ذوالفقار، شیخ محمد امجد، فیصل بٹ و دیگر نے شرکت کی۔ پٹرولیم کی قیمتوں میں اضافے سے ملکی معیشت پر منفی اثرات آئیں گے۔ تاجر و صنعتکار کی پیداواری لاگت میں بھی مزید اضافہ ہو گا۔کرونا وبا کی وجہ سے پچھلے چند ماہ کے دوران صنعت و تجارت سے وابستہ تمام شعبہ جات پہلے ہی بری طرح متاثر ہیں۔ ایسے حالات میں حکومت مہنگائی کرنے کی بجائے کاروباری طبقہ کو ریلیف دے، پٹرولیم مصنوعات مہنگی کرنے کی بجائے ڈیوٹیز اور ٹیکسز کی شرح کم کرے، غیر پیداواری اخراجات میں کمی لائی جائے تاکہ پیداواری لاگت اور مہنگائی کم ہو سکے۔ پٹرول صنعت و تجارت و زراعت کے لئے خام مال کا درجہ رکھتا ہے اور اسکی قیمتوں میں اضافے سے پیداواری لاگت میں مزید اضافہ ہو جاتا ہے اور فیول کی قیمتیں بڑھنے سے بجلی کی قیمت بھی بڑھ جاتی ہے اورمہنگی بجلی،مہنگی پیدوار کا باعث ہے جس سے ملک میں ہوشربا مہنگائی میں اضافہ ہورہا ہے۔

مزید :

کامرس -