.غلط چالان کرنے پر ڈرائیور نے رکشے کوآگ لگادی

    .غلط چالان کرنے پر ڈرائیور نے رکشے کوآگ لگادی

  

لاہور(کرائم رپورٹر) قربان لائن کے علاقے میں رکشہ ڈرائیور نے پولیس کے رویے سے دلبرداشتہ ہو کر اپنے رکشے کو آگ لگا لی جس سے رکشہ جھل کر مکمل طور پر راکھ ہو گیا شہر میں ٹریفک پولیس کے خلاف احتجاج کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے اس حوالے سے ایک رکشہ ڈرائیور بلال نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہو ئے بتایا ہے کہ ٹریفک پولیس روزانہ اپنا ریونیو اور چالانوں کا ٹارگٹ پورا کرنے کے لیے درجنوں بے گناہ رکشہ درائیوروں اور دیگر لوکل ٹرانسپوٹرز کے چالان کر کے ان کا جینا حرام کر رکھا ہے بے بس اور لاچار ٹرانسپورٹرزدل ہی دل میں حکومت اور ضلعی انتظامیہ کو سارا دن تنقید کا نشانہ بنانے اور گالیاں دینے پر مجبور ہیں قربان لائن کے قریب رکشہ ڈرائیور جس نے اپنے رکشے کو آگ لگا کر جلایا ہے وہ اس کا بھائی تھا اور اس نے ٹریفک اہلکار کے رویے اور غلط چالان کرنے پر اپنے رکشے کو آگ لگائی ہے تاکہ حکومت اس کا نو ٹس لے اور آئندہ اس طرح کے واقعات کی روک تھام ہوسکے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت کو اس بات کا نوٹس لینا چاہیے ٹریفک پولیس حکام کے مطابق قربان لائنز کے قریب اوورلوڈنگ پر رکشہ ڈرائیور کو 08:22 منٹ پر چالان ٹکٹ جاری کیا گیا ڈرائیور نے شناختی کارڈ جمع کرواتے ہوئے چالان وصول کیا۔ اور موقعہ سے چلا گیا اور تقریباً پونے گھنٹے کے بعد اسی جگہ پر پٹرول کی بوتل ساتھ لایا اور رکشہ کو آگ لگا دی، موقعہ پر موجود فورسز نے آگ بجھانے کی کوشش کی مگر رکشہ ڈرائیور مزاحمت کرتا رہا۔

مزید :

علاقائی -