اکبر ایوب خان کی زیر صدارت پشاور پبلک اسکول کا بورڈ آف گورنرز کا اجلاس

اکبر ایوب خان کی زیر صدارت پشاور پبلک اسکول کا بورڈ آف گورنرز کا اجلاس

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)صوبائی وزیر برائے ابتدائی وثانوی تعلیم اکبر ایوب خان نے کہا ہے کہ پشاور پبلک سکول کی فیس سٹرکچر پرائیویٹ سکول ریگولیٹری اتھارٹی کے رولز کے مطابق مقرر کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ سٹاف کی اپ گریڈیشن کے لئے گورنمنٹ پالیسی مد نظر رکھی جائے۔اور تمام خودمختیار تعلیمی ادارے جلد از جلد پی ایس آر اے کے ساتھ رجسٹرڈ کیے جائیں۔انہوں نے یہ ہدایات پشاور پبلک سکول کے بورڈ آف گورنر اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کیں۔ سیکرٹری ایجوکیشن ندیم اسلم چوہدری، چیئرمین پشاور تعلیمی بورڈ قیصر عالم، ایڈیشنل سیکرٹری فنانس سفیر للہ خان اور بورڈ کے دیگر ممبران اس موقع پر موجود تھے۔اجلاس میں فیصلہ ہوا کہ پشاور پبلک سکول کے سٹاف کی بھرتی گورنمنٹ کی طرف سے جاری کردہ رولز کے مطابق ہوگی اور گریڈ-1 سے لیکر گریڈ-16 کی بھرتی کا اختیار پرنسپل کے پاس ہوگا تاہم گریڈ-7 اور اس سے اوپر کی آسامیوں کیلئے ٹیسٹنگ ایجنسی کی خدمات حاصل کی جائیں۔اجلاس میں یہ بھی فیصلہ ہوا کہ ضرورت مند اور نادر بچوں کے لئے انڈوومنٹ فنڈ کا قیام عمل میں لایا جائے۔ جب کہ سکول میں بچوں کے داخلے کے وقت سیکیورٹی فیس ضرور لی جائے اور اسی طرح غریب،یتیم اور نادار بچوں کو بھی 2.5 فیصد کے حساب سے فیس معافی دی جائے۔پشاور پبلک سکول کے کمپیوٹر آپریٹرز کی اپ گریڈیشن کے حوالے سے بورڈ نے فیصلہ کیا کہ کمپیوٹر آپریٹر کی ترقی بورڈ آف گورنرز کے فیصلے والے دن سے ہوگی۔اسی طرح سکول رولز 2009 کو ریوائزڈ کرنے کے لئے ایک کمیٹی بنانے کے احکامات بھی جاری کیے گئے تاکہ سکول رولز کو موجودہ حکومتی قانون کے مطابق بنایا جا سکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -