تاجر برادری اور بلڈنگ مالکان مشکل وقت سے گزر رہے ہیں، ٹیکس معاف کئے جائیں:عاطف حلیم

تاجر برادری اور بلڈنگ مالکان مشکل وقت سے گزر رہے ہیں، ٹیکس معاف کئے ...

  

پشاور(سٹی رپورٹر)پشاور شہر کے کاروباری حضرات اور بلڈنگ مالکان نے کہا کہ کورونا وبا سے کاروبار بالکل ٹھپ ہو گئے ہیں پچھلے چار ماہ سے کرایے نہیں مل رہے اور اکثر کرایہ دار بھی کرایہ ادا نہ کرسکنے کی وجہ سے جا چکے ہیں جس کی وجہ سے گھر کے اخراجات کو پورا کرنا بھی دشوار ہے اور زندگی میں پہلی مرتبہ اپنی ضروریات کیلئے قرض لینے پڑ رہے ہیں ایسے مخدوش حالات میں محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن سے مطالبہ ہے کہ مالکان کو بے جا تنگ کرنے سے گریز کیا جائے یہ باتیں عامر صدیقی، عامر زیب، ابو بکر شنواری، طاہر ظفر، محمد رحمان، فرمان الہی، شکیل احمد رحمان گل، ہاشم خان اور دیگر پر مشتمل ایک وفد نے گزشتہ روز پشاور چیمبر کے صدر محمد عاطف حلیم سے چیمبر آفس میں ملاقات کے دوران کہیں اور اپنے دیگر مسائل سے بھی انہیں آگاہ کیا۔ محمد عاطف حلیم نے وفد کو اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن تاجروں کے ساتھ کئے گئے اپنے وعدوں پر عمل کریں ہم نہ ملک کا خزانہ خالی کرنا چاہتے ہیں اور نہ اسے لوٹنا چاہتے ہیں اس ملک میں پیدائش سے لیکر ابھی تک ہر قسم کی فیس اور ٹیکس ادا کئے ہیں اور آئندہ بھی دینگے اور نہ ہی ملک کولوٹنے والوں میں ہم شامل ہیں لیکن کورونا وبا سے پیدا ہونے والی مشکل صورتحال کے پیش نظر جبکہ دنیا بھر میں ہر ملک کاروباری لوگوں کو بلا سود قرضے اور ریلیف پیکج دے رہاہے اس کے بر عکس ہمارے ساتھ حکومتی تعاون کی بجائے منہ کا نوالہ بھی چھینا جا رہا ہے انہوں نے وزیر اعلی خیبرپختونخوا محمود خان سے مطالبہ کیا کہ اس حوالے سے تاجروں سے ملاقات کا وقت دیں تا کہ ہمارے مسائل سنے اور حل کئے جائیں اور اس سال تاجروں اور بلڈنگ مالکان کو تمام ٹیکسوں سے چھوٹ دی جائے اوران ٹیکسوں کو یکسر ختم کیا جائے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -