حکومت سیکرٹریٹ ایشو پرصوبے کامقدمہ خراب کررہی ہے، ظہور دھریجہ

  حکومت سیکرٹریٹ ایشو پرصوبے کامقدمہ خراب کررہی ہے، ظہور دھریجہ

  

ملتان (سٹی رپورٹر)سرائیکستان صوبہ محاذ کے رہنماؤں ظہور دھریجہ، رانا ذیشان نون اور شریف خان لشاری نے ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وسیب میں تفریق پیدا کرنے والے سول سیکرٹریٹ کے سازشی منصوبے کو مسترد کرتے ہیں۔ وسیب 16 اضلاع نہیں 23 اضلاع پر مشتمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ بہاولپور بھی ہمارا اپنا ہے مگر میرٹ پر (بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

دارالحکومت ملتان کا حق بنتا ہے کہ ہم نے ٹانک، ڈی آئی خان، میانوالی، بھکر اور جھنگ سمیت پورے وسیب کو ساتھ لیکر چلنا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت سول سیکرٹریٹ کے نام پر صوبے کا مقدمہ خراب کرنا چاہتی ہے اور وسیب کے خلاف لڑاؤ اور حکومت کرو جیسے استعماری حربے استعمال کئے جا رہے ہیں، جن کے خلاف ہم احتجاج کریں گے، دھرنے دیں گے اور لانگ مارچ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سول سیکرٹریٹ نہیں صوبہ چاہئے۔ سول سیکرٹریٹ صوبے کا متبادل نہیں، حکومت کا یہ کہنا غلط ہے کہ ہم نے وعدہ پورا کر دیا۔ ہم واضح کرنا چاہتے ہیں کہ سول سیکرٹریٹ کا نہیں صوبے کا وعدہ ہوا تھا۔ تحریک انصاف کی طرف سے الیکشن کمپین سول سیکرٹریٹ نہیں بلکہ صوبے کے نام پر چلائی گئی تھی اور صوبہ محاذ کا عمران خان سے تحریری معاہدہ صوبے کا تھا نہ کہ سول سیکرٹریٹ کا۔ انہوں نے کہا کہ سول سیکرٹریٹ ایسے ہے جیسے بچے کو کھیلنے کیلئے کھیلونا دے دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ وسیب کی مکمل حدود اور شناخٹ کے مطابق صوبہ بنایا جائے۔ ہم سول سیکرٹریٹ کے لولی پاپ کو مسترد کرتے ہیں۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ حکومت وسیب کے کروڑوں افراد سے مذاق بند کرے، ملتان بہاولپور کی تقسیم قبول نہیں، ہم وسیب کی یکجہتی کی بات کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو خبردار کرتے ہیں کہ وہ سرائیکی قم کی توہین نہ کریں ورنہ ان کے خلاف پورے وسیب میں مہم چلائی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ سرائیکی وسیب کے لوگوں کو صوبہ اور شناخت چاہئے، ہمارا سی ایس ایس اور پی ایم ایس کا کوٹہ علیحدہ کیا جائے، ہمارا صوبائی پبلک سروس کمیشن فوری طور پر بنایا جائے، ہم این ایف سی ایوارڈ میں حصہ، ریونیو بورڈ، علیحدہ ہائیکورٹ اور فوج میں وسیب رجمنٹ چاہتے ہیں۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ ہم خیرات نہیں اپنا حق مانگتے ہیں۔ اس موقع پر ثوبیہ ملک،روبینہ بخاری، شریف بھٹہ، سلیم سانول، حاجی عید احمد، زبیر دھریجہ، سہیل اعوان،افضال بٹ، شبیر بلوچ، بابا ممتاز، رضوان دھریجہ،واقف ملتانی، ثقلین سعید بھٹہ بھی موجود تھے۔

ظہور

مزید :

ملتان صفحہ آخر -