کورونا سے مزید 33افراد جاں بحق، لاہور میں بند 61علاقے کھول دیئے گئے، 7کی بندش میں 3دن کی توسیع

کورونا سے مزید 33افراد جاں بحق، لاہور میں بند 61علاقے کھول دیئے گئے، 7کی بندش ...

  

لاہور، کراچی، اسلام آباد، پشاور (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)ملک میں کورونا سے مزید 33 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد اموات کی مجموعی تعداد 4424 ہوگئی جب کہ نئے کیسز سامنے آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 215625 تک پہنچ گئی۔اب تک پنجاب میں کورونا سے 1762 اور سندھ میں 1406 افراد انتقال کرچکے ہیں جب کہ خیبر پختونخوا میں 951 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔اس کے علاوہ اسلام آباد میں 128، بلوچستان میں 121، آزاد کشمیر میں 30 اور گلگت بلتستان میں 26 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔بدھکو ملک بھر سے کورونا کے مزید 2323 کیسز اور 33 ہلاکتیں رپورٹ ہوئی ہیں جن میں سندھ سے 2139 کیسز 29 ہلاکتیں، اسلام آباد 137 کیسز، آزاد کشمیر 28 کیسز 2 ہلاکتیں اور گلگت سے 19 اور 2 ہلاکتیں سامنے آئی ہیں۔سندھ سے کورونا کے مزید 2139 کیسز اور 29 اموات سامنے آئی ہیں جن کی تصدیق وزیراعلیٰ سندھ نے بذریعہ ٹوئٹر کی۔مراد علی شاہ کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا کے 8201 ٹیسٹ کیے گئے جن میں 2139 نئے مریض سامنے آئے اور 29 اموات ہوئیں جس کے بعد صوبے میں کیسز کی کل تعداد 86795 اور ہلاکتیں 1406 ہوگئی ہیں۔وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ صوبے 2139 کیسز میں سے 1038کا تعلق کراچی سے ہے۔وزیراعلیٰ نے بتایا کہ مزید 1703 مریض صحتیاب ہوئے جس سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 48527 ہوگئی ہے۔وفاقی دارالحکومت سے کورونا کے مزید 137کیسز ہلاکت سامنے آئے ہیں جس کی تصدیق سرکاری پورٹل پر کی گئی۔پورٹل کے مطابق اسلام آباد میں کیسز کی مجموعی تعداد 12912 اور اموات 128ہوچکی ہیں۔اسلام آباد میں اب تک کورونا وائرس سے 7261 افراد صحت یاب ہو چکے ہیں۔آزاد کشمیر سے آج کورونا کے مزید 28 کیسز اور 2 ہلاکتیں سامنے آئی ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کی گئی ہیں۔پورٹل کے مطابق آزاد کشمیر میں کورونا کے کل کیسز کی تعداد 1093 اور اموات کی تعداد 30 ہے۔سرکاری پورٹل کے مطابق آزاد کشمیر میں کورونا سے متاثرہ 550 افراد صحت یاب ہو چکے ہیں۔ گلگت بلتستان سے کورونا کے مزید 19 کیسز اور 2 ہلاکتیں سامنے آئی ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کی گئی ہیں۔پورٹل کے مطابق علاقے میں کیسز کی کل تعداد 1489 اور اموات 26 ہوگئی ہیں۔گلگت میں کورونا سے اب تک 1128 افراد صحتیاب بھی ہوچکے ہیں۔

لاہو، کراچی، اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)) کورونا وائرس پر قابو پانے کے لئے پہلے فیز میں بند ہونے والے لاہور کے 61 علاقے کھل گئے، 7 علاقوں کی بندش میں تین روز کی توسیع کر دی گئی۔جوہرٹاؤن میں اے بلاک، بی ون، ای، ایف ٹو بلاک، جی بلاک، ایچ، جے، آر بھی کھول دیا گیا۔ کینال ویو سوسائٹی، واپڈا ٹاؤن، پی سی ایس آئی آر کے علاقے کھول دیئے گئے۔ ڈی ایچ اے فیز ون کے تمام سیکٹر کھول دیئے گئے۔عسکری ٹین، ڈی ایچ اے فیز تھری اور فائیو بھی کھولنے والے علاقوں میں شامل ہیں۔ اولڈ انار کلی، کریم پارک، حکیم والا بازار، چھوٹا ساندہ کو کھول دیا گیا۔ شاد باغ محلہ گول باغ کیعلاقے کی سیل گلیوں کو بھی کھول دیا گیا، واہگہ کے علاقے میں گلی نمبر 10، محلہ شاہ نورداروغہ والا کو کھول دیا گیا دوسری طرفحکومت بلوچستان نے صوبے بھر میں اسمارٹ لاک ڈاؤن میں مزید 15 دن کی توسیع کردی گئی۔ محکمہ داخلہ بلوچستان کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق صوبے بھر میں کورونا وبا کے پیش نظر جاری اسمارٹ لاک ڈاؤن میں 15 جولائی تک توسیع کردی گئی ہے۔ نوٹی فکیشن کے مطابق صوبے بھر کے صوبے بھر کے تعلیمی ادارے 15 جولائی تک بند رہیں گے، بازار اور مارکیٹیں صبح 9 سے شام 7 بجے جب کہ میڈیکل اسٹورز، تندور، ڈیری پروڈکٹس، درزی کی دکانیں، ریسٹورنٹس اور ہوٹلز ہوم ڈیلیوری کے لئے 24 گھنٹے کھلے رہ سکتے ہیں تاہم فارم ہاؤسز،شادی ہال اور پکنک پوائنٹس بدستور بند رہیں گے۔دریں اثناسول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) نے اندرون ملک پروازیں اڑانے کے اجازت نامے میں 31 اگست تک توسیع کردی۔ سول ایوی ایشن کے نوٹم کے مطابق کراچی، لاہور، اسلام آباد، پشاور اور کوئٹہ سے پورے ملک میں پروازوں کی اجازت ہوگی جب کہ گلگت، اسکردو ائیرپورٹ پر صرف اسلام آباد سے پروازیں جائیں گی۔ نوٹم کے مطابق ملک کے دیگر تمام ائیرپورٹس پر اندرون ملک پروازیں بند رہیں گی۔راولپنڈی انتظامیہ نے کورونا کے بڑھتے کیسز کے باعث 8 علاقوں کو سیل کرکے دفعہ 144 نافذ کردی۔ڈپٹی کمشنر راولپنڈی انوارالحق کے مطابق چیف سیکرٹری پنجاب کو 8 ہاٹ اسپاٹس بند کرنے کی سفارش کی گئی تھی جس کی منظوری کے بعد محکمہ داخلہ نے نوٹفیکیشن جاری کردیا۔بند ہونے والے علاقوں میں گلزارقائد، خیابان سرسید، ڈھوک علی اکبر، کوٹھ کلاں، مورگاہ، تخت پڑی، نرنکاری بازار اور باڑا مارکیٹ شامل ہیں۔ڈی سی راولپنڈی نے بتایا کہ ہاٹ اسپاٹس علاقوں میں بڑی مارکیٹیں، شاپنگ مالز، ریسٹورینٹس، سرکاری و نجی دفاتربند رہیں گے جب کہ مکینوں کو روز مرہ اشیائے ضروریہ کے حصول کی سہولت ہوگی۔ان علاقوں میں کریانہ دکانیں، جنرل اسٹورز، آٹا چکیاں، پھل و سبزی کی دکانیں، تندور اور میڈیکل سروسز پیٹرول پمپس صبح 9سے شام 7بجے تک کھلے رہیں گے۔اس کے علاوہ دودھ، چکن، گوشت، مچھلی کی دکانیں اور بیکریاں صبح 7سے شام 7بجے تک کھلی رکھنے کی اجازت ہو گی۔ہاٹ اسپاٹس قرار دے جانے والے علاقوں میں پبلک، پرائیوٹ ٹرانسپورٹ کیذریعے لوگوں کے آنے جانے پرپابندی ہوگی جب کہ محدود سفر کے لیے ایک گاڑی میں ایک فرد کو اجازت دی گئی ہے۔سیل کیے گئے علاقوں میں تمام میڈیکل اسٹورز، لیبارٹریز، کلیکشن پوائنٹس، اسپتال اور کلینکس 24 گھنٹے کھلے رکھنے کی اجازت ہوگی۔ ڈی سی راولپنڈی کا کہنا تھا کہ یہ پابندیاں 3 جولائی کی رات 9 بجے تک برقرار رہیں گی۔محکمہ داخلہ سندھ نے کورونا وائرس کے پیش نظر کراچی سمیت صوبے بھر میں جاری لاک ڈاؤن میں مزید پندرہ دن کی توسیع کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔نوٹیفکیشن کے مطابق پرانے طرز پر پابندیاں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ کاروباری مراکز پیر سے جمعہ صبح چھ سے شام سات بجے تک کھلے رہیں گے۔ہفتے اور اتوار کو مکمل طور پر لاک ڈاؤن رکھا جائے گا۔ حکم نامے میں مزید کہا گیا ہے کہ شہری رات گیارہ بجے تک ہوم ڈیلیوری کی سہولیت سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ تعلیمی ادارے، سینما گھر، تفریحی مقامات، کھیلوں کی سرگرمیاں اور شادی ہالز پر پابندی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

لاک ڈٓؤن

مزید :

صفحہ اول -