بیرون ملک جانے والے مسافروں کے کوروناٹیسٹ ہوں گے،جن کوکوروناکاخدشہ ہے وہ ایئرپورٹس کارخ نہ کریں،معید یوسف

بیرون ملک جانے والے مسافروں کے کوروناٹیسٹ ہوں گے،جن کوکوروناکاخدشہ ہے وہ ...
بیرون ملک جانے والے مسافروں کے کوروناٹیسٹ ہوں گے،جن کوکوروناکاخدشہ ہے وہ ایئرپورٹس کارخ نہ کریں،معید یوسف

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستانی ایئرپورٹس پرسکریننگ کاعمل کامیابی سے جاری ہے،بیرون ملک جانے والے مسافروں کے کوروناٹیسٹ ہوں گے،جن مسافروں کوکوروناکاخدشہ ہے وہ ایئرپورٹس کارخ نہ کریں،جن افرادکوکوروناکی علامات ہیں وہ ٹیسٹ کراکر ایئرپورٹ آئیں۔

مشیر قومی سلامتی معید یوسف نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ 70ممالک سے پاکستانی واپس آچکے ہیں ،بیرون ملک سے پاکستانیوں کی واپسی کاعمل جاری ہے، خلیجی ممالک کیلئے پی آئی اے کی پروازیں جاری رہیں گی،ڈیڑھ ہفتے میں بیرون ملک پھنسے پاکستانی واپس آجائیں گے ،بیرون ملک سے آنے والے پاکستانیوں میں سے 90 فیصدمحنت کش ہیں۔

مشیر قومی سلامتی معید یوسف کی پاکستان سے کورونا کیسز دیگر ممالک میں جانے کی تردید کرتے ہوئے کہاکہ اگر آپ میں کوئی بھی علامات ہیں توسفر نہ کریں ،انہوں نے کہاکہ اس بات کی تردید کرتاہوں پاکستان کی وجہ سے پوری دنیا میں کورونا ایکسپورٹ ہوا،اب ہمیں تنقید کانشانہ بنایا جارہا ہے،برطانیہ میں تنقید کانشانہ بنایا گیا جو پاکستانی گئے ان میں سے 50 فیصد کورونا کاشکار ہیں ،پاکستان سے بیرون ملک جانے والے مسافروں میں کوروناکی شرح کم ہے۔

معاون خصوصی معید یوسف نے کہاکہ پاکستانی ایئرپورٹس پرسکریننگ کاعمل کامیابی سے جاری ہے،بیرون ملک جانے والے مسافروں کے کوروناٹیسٹ ہوں گے،جن مسافروں کوکوروناکاخدشہ ہے وہ ایئرپورٹس کارخ نہ کریں،جن افرادکوکوروناکی علامات ہیں وہ ٹیسٹ کراکر ایئرپورٹ آئیں،معاون خصوصی نے کہا کہ برطانیہ ایئرپورٹس پر ٹیسٹ نہیں کرتا،گھروں پر قرنطینہ کرایاجاتاہے،کوروناسے پوری دنیا متاثر ہے ،پاکستان الگ تھلگ نہیں رہ سکتا،پوری کوشش ہے پاکستان سے کورونا کا کوئی متاثر باہر ملک نہ جائے۔

ایسے واقعات سامنے آئے ہیں کچھ مسافروں میں کورونا مثبت کیسز پائے گئے،بیرون ملک جانے والے مسافروں کوملک کی بدنامی سے گریزکرنا چاہیے،بیرون ملک جانے والے خواہشمند مسافر گائیڈ لائنز پر عمل درآمد کریں ،مسافر ذمے داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے سفر کا فیصلہ کریں،انہوں نے کہاکہ ابھی کورونا ختم نہیں ہوا میری آپ سب سے التجاہے اپنا خیال رکھیں ،کوئی بھی ایسا مریض بیرون ملک نہ جائے جو کورونا میں مبتلاہو۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -