حکومت پرعوام کواعتمادہے نہ سمندرپارپاکستانیوں کو،بڑے بڑے دانشور ووٹ دےکر اپنے فیصلوں پر نادم ہیں،مولانا فضل الرحمان

حکومت پرعوام کواعتمادہے نہ سمندرپارپاکستانیوں کو،بڑے بڑے دانشور ووٹ دےکر ...
حکومت پرعوام کواعتمادہے نہ سمندرپارپاکستانیوں کو،بڑے بڑے دانشور ووٹ دےکر اپنے فیصلوں پر نادم ہیں،مولانا فضل الرحمان

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جمعیت علمائے اسلام کے رہنما مولانا فضل الرحمان نے کہاہے کہ حکومت اپنے اہداف میں ناکام ہوچکی ہے ،حکومت پرعوام کواعتمادہے نہ سمندرپارپاکستانیوں کو،ووٹ دینے والے اب پچھتارہے ہیں،بڑے بڑے دانشور ووٹ دےکر اپنے فیصلوں پر نادم ہیں۔

مولانا فضل الرحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ معیشت تباہ ہوچکی ہے ،بجٹ صفر سے بھی نیچے چلاگیا،پہلی بارہے کہ نئے سال کیلئے محصولات کاہدف گزشتہ سال سے کم رکھاگیا،یہ بجٹ ایسا ہے تو آئند سال کیسے ہوگا؟۔سب کے سامنے آرہا ہے کہ ہم نے جو پہلے دن موقف اختیار کیا تھا وہ ٹھیک تھا، جو الیکشن ہوا وہ بھی ڈھونگ ،حکومت بنی وہ بھی ڈھونگ ، بجٹ بنا وہ بھی ڈھونگ، جنھوں نے انکی پروجیکشن میں سالوں لگائے وہ بھی سمجھتے ہیں انکو ووٹ دینا غلط تھا۔

انہوں نے کہاکہ حکومت اپنے اہداف میں ناکام ہوچکی ہے ،براہ راست سرمایہ کاری میں 50فیصدکمی آئی،حکومت پرعوام کواعتمادہے نہ سمندرپارپاکستانیوں کو،اس وقت ہماراملک انتہائی معاشی بحران میں ہے،عوام حکومت کو ٹیکس دینے کوپیسے کاضیاع سمجھتے ہیں،ووٹ دینے والے اب پچھتارہے ہیں،بڑے بڑے دانشور ووٹ دےکر اپنے فیصلوں پر نادم ہیں۔

سربراہ جے یو آئی نے کہاکہ کہتے ہیں کہ احتساب ہوگا، کیسا احتساب ، ایسے احتساب پر تو انکو شرم آنی چاہیے ،کے پی میں جب دیکھا کہ انکے وزرا اور حکومت شکنجے میں آرہی ہے تو احتساب کمیشن ختم کردیا،بی آر ٹی ، بلین ٹری منصوبہ ہو تو پھر عدالتوں سے سٹے لیتے ہیں، یہ احتساب اپنا اعتمادکھوبیٹھا ۔

مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ ہم تو پہلے ہی اس احتساب کے قائل نہیں تھے بڑی جماعت اس قانون کو رکھنا چاہتی تھی آج وہ بھی پشمان ہیں،کہتے تھے کہ ہم چوروں کو پکڑیں گے ،چور مل نہیں رہے تھے اب تو چور مل گئے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -