افغان فوج کی غلطی سے اپنے ہی شہریوں پر گولہ باری سے 23 لوگ مارے گئے

افغان فوج کی غلطی سے اپنے ہی شہریوں پر گولہ باری سے 23 لوگ مارے گئے
افغان فوج کی غلطی سے اپنے ہی شہریوں پر گولہ باری سے 23 لوگ مارے گئے

  

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک) افغان فوج نے غلطی سے اپنے شہریوں پر ہی گولہ باری کر دی جس سے 23لوگ لقمہ اجل بن گئے۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ افسوسناک واقعہ افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند میں پیش آیا جہاں سنگین شہر میں فوج نے غلطی سے ایک مصروف مارکیٹ پر بم اور مارٹر گولے فائر کر دیئے۔واقعے کے بعد فوج کی طرف سے اس کی ذمہ داری طالبان پر اور طالبان کی طرف سے افغان فوج پر ڈال دی گئی۔

فریقین کی طرف سے ایک دوسرے پر ذمہ داری ڈالے جانے کے بعد اقوام متحدہ کے مشن نے اس کی تحقیقات شروع کر دیں۔ اب مشن نے بتایا ہے کہ انہیں ایسے شواہد مل گئے ہیں جن سے ثابت ہوتا ہے کہ یہ گولہ باری افغان فوج نے غلطی سے کی۔ مشن کی طرف سے آفیشل ٹوئٹر اکاﺅنٹ کے ذریعے بتایا گیا ہے کہ ”کئی بااعتماد ذرائع نے ہمیں بتایا ہے کہ یہ گولہ باری افغان فوج نے کی۔ فوج پر طالبان کی طرف سے مارٹر گولے فائر کیے گئے تھے جس کے جواب میں فوج نے کارروائی کی مگر غلطی سے ان کا نشانہ یہ مارکیٹ بن گئی۔“

مزید :

بین الاقوامی -