اداکارہ میا خلیفہ کو فحش فلمیں بنانے والی کمپنی نے قانونی نوٹس بھیج دیا، بدنام کرنے کا الزام

اداکارہ میا خلیفہ کو فحش فلمیں بنانے والی کمپنی نے قانونی نوٹس بھیج دیا، ...
اداکارہ میا خلیفہ کو فحش فلمیں بنانے والی کمپنی نے قانونی نوٹس بھیج دیا، بدنام کرنے کا الزام

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) فحش فلموں کی سابق اداکارہ میا خلیفہ نے گزشتہ دنوں اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ کے ذریعے فحش فلم سٹوڈیو ’بینگ بروز‘ پر الزام عائد کیا تھا کہ اس کے ایگزیکٹو جورڈن سبس نے ان کے ساتھ دھوکا کیا اور جھوٹ بولا کہ جس فوٹوگرافر سے اس کا شوٹ کروا رہے ہیں وہ ووگ کے ساتھ کام کرچکا ہے۔ اس الزام کے بعد اب بینگ بروز کی طرف سے میا خلیفہ کے خلاف ہتک عزت کا دعویٰ کر دیا گیا ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس فحش ویب سائٹ کی طرف سے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر بتایا گیا ہے کہ انہوں نے فحش فلموں کی سا بق اداکارہ کو قانونی نوٹس بھجوا دیا ہے کیونکہ اس نے ویب سائٹ کا نام بدنام کرنے کی کوشش کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق میا خلیفہ اپنی حجاب میں شوٹ کروائی گئی ایک فلم کی وجہ سے زیرعتاب آئی تھیں او رشدت پسند تنظیم داعش کی طرف سے بھی انہیں اس فلم کی وجہ سے قتل کی دھمکیاں ملنے لگی تھیں۔ اپنی ٹویٹس میں میا خلیفہ نے کہا تھا کہ جورڈن سبس نے دھوکے سے میری حجاب میں فلم شوٹ کی۔ انہوں نے مجھے کہا کہ جو فوٹوگرافر میری فلم شوٹ کر رہا ہے وہ ووگ میگزین کے ساتھ کام کر چکا ہے۔ مجھے بعد میں پتا چلا کہ میری وہ ویڈیو بینگ بروز کی فحش فلموں کی ویب سائٹ پر پوسٹ کر دی گئی ہے۔ فحش فلموں کی ویب سائٹ پر میری ویڈیو پوسٹ کرنے کے لیے مجھ سے اجازت بھی نہیں لی گئی تھی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -