چین کو غصہ دلانے کے لیے سرحد پر بے بس بھارت نے اب ہانگ کانگ کا رُخ کرلیا

چین کو غصہ دلانے کے لیے سرحد پر بے بس بھارت نے اب ہانگ کانگ کا رُخ کرلیا
چین کو غصہ دلانے کے لیے سرحد پر بے بس بھارت نے اب ہانگ کانگ کا رُخ کرلیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) تبت میں ایل اے سی پر چینی فوج کے ہاتھوں درگت بنوانے کے بعد اب بھارت نے چین کو غصہ دلانے کے لیے ہانگ کانگ کا رخ کر لیا ہے۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق ہانگ کانگ میں آزادی کے حق میں ہونے والے مظاہروں پر پہلی بار بھارتی حکومت کی طرف سے ایک بیان سامنے آیا ہے جس میں اس کی طرف سے کہا گیا ہے کہ ”بھارت ہانگ کانگ کی صورتحال کو قریب سے دیکھ رہا ہے کیونکہ بھارتیوں کی ایک بڑی تعداد بھی وہاں مقیم ہے۔“

رپورٹ کے مطابق بھارتی ہائی کمشنر نے جنیوا میں انسانی حقوق کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ ”ہم نے کئی ایسے بیانات سنے ہیں جن میں ہانگ کانگ کی صورتحال میں ہونے والی پیش رفت پر تحفظات کا اظہار کیا گیا ہے۔ ہم امید کرتے ہیں کہ فریقین ان بیانات پر غور کریں گے اور اس معاملے کو سنجیدگی سے لیں گے اور مناسب طریقے سے سلجھائیں گے۔“

واضح رہے کہ ہانگ کانگ میں چین کی طرف سے ایک نیا سکیورٹی قانون لاگو کیا گیا ہے جس کے خلاف سینکڑوں لوگ احتجاج کے لیے سڑکوں پر نکلے ہوئے ہیں۔ ہانگ کانگ کے شہریوں کا موقف ہے کہ یہ نیا قانون ہانگ کانگ کی خودمختاری ختم کر دے گا۔ گزشتہ روز پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس اور مرچوں کے سپرے کا استعمال کیا اور370مظاہرین کو حراست میں بھی لے لیا گیا۔

مزید :

بین الاقوامی -