اوورسیز پاکستانیوں کے لیے قانون سازی اہم ضرورت بن چکی ہے،لند ن میں انٹر نیشنل لائرز ایسوسی ایشن کا تقریب میں خطاب

اوورسیز پاکستانیوں کے لیے قانون سازی اہم ضرورت بن چکی ہے،لند ن میں انٹر ...
اوورسیز پاکستانیوں کے لیے قانون سازی اہم ضرورت بن چکی ہے،لند ن میں انٹر نیشنل لائرز ایسوسی ایشن کا تقریب میں خطاب

  

لندن ( چوہدری تبریز عورہ )انٹرنیشنل لائرز ایسوسی ایشن نے کہا ہے کہ اوورسیز پاکستانیوں کے لیے پاکستان میں قانون سازی وقت کی اہم ضرورت بن چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق انٹرنیشنل لائرز ایسوسی ایشن نے لندن کے مقامی ریستوران میں اوورسیز پاکستانیوں کو پاکستان میں ووٹ کے حق پر ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا جس میں لیگل پروفیشنل کمیونٹی نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ تقریب کی میزبانی آئی ایل اے کے صدر سجاد کیانی ایڈوکیٹ اور سٹیج سیکریٹری کی خدمات مرزا صفدر اقبال ایڈوکیٹ نے سرانجام دیں ۔

 اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق ملنے اور اس میں موجود قانونی تقاضوں اور قانونی پیچیدگیوں کا باغور جائزہ لیا گیا ۔مقررین نے اپنے خطاب میں کہا کہ دنیا میں 195 ممالک میں سے 116 ملکوں نے اپنے اوورسیز کو ووٹ کا حق دے رکھا ہے ۔پاکستان نے اپنے اوورسیز کو جو ووٹ کا حق دینے کا فیصلہ کیا ہے یہ ناکافی ہے کیونکہ اوورسیز سمجھتے ہیں کہ ان کو اسمبلیوں میں بھی مناسب نمائندگی ملنی چاہئے گو کہ یہ بہت دیر کے بعد حق دیا جا رہا ہے لیکن پھر بھی اوورسیز پاکستانیوں کا ایک دیرینہ مطالبہ پورا ہوتا نظر آ رہا ہے اس لیے اپوزیشن اور حکومت کو مل بیٹھ کر خوش اسلوبی سے قانون سازی کر نی چاہئے۔ ان کا کہنا تھا کہ اب ضرورت اس امر کی ہے کہ سارے ووٹنگ کے عمل کو شفاف بنایا جائے اور اس کے اندر جو قانونی پیچیدگیاں ہیں ان کو دور کیا جائے اوورسیز میں موجود تمام سیاسی پارٹیوں کی مشترکہ کمیٹی ہونی چاہیے جو کہ ووٹنگ کے عمل کو دیکھے اور اس سارے عمل کو نادرا کے ساتھ لنک کر دیا جائے تاکہ کسی قسم کی الزام تراشی یا کوتاہی نہ ہو سکے ۔ اوورسیز پاکستانیوں کو پارلیمنٹ میں مناسب نمائندگی ، اوورسیز میں آباد وکلا کو سپریم کورٹ کی وکالت کے لائسنس اور اوورسیز میں آباد پاکستانی میڈیا سے منسلک صحافیوںکی انرولمنٹ کے لیے قانونی سازی بھی ووٹ کے حق کے ساتھ ہی ہونی چاہئیں۔ پروگرام کے آخر میں مشہور گلوکار سہیل سلامت نے اپنی خوبصور ت آواز میں ملی نغمے پیش کئے۔

مزید :

تارکین پاکستان -