سودی نظام کو فروغ دینا عذاب کو دعوت دینا ہے‘ جماعت اسلامی

        سودی نظام کو فروغ دینا عذاب کو دعوت دینا ہے‘ جماعت اسلامی

  

چکدرہ(تحصیل رپورٹر)سود کاکاروبارکرنااللہ اور اس کے رسول کیساتھ جنگ کرناہے،اسلام کے نام پر بنے ملک میں سودی نظام کو فروغ دینا عذاب قدرت کو دعوت دیناہے،سود کے خاتمے سے متعلق اسلامی نظریاتی کونسل کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کرنے والے بینکس اور مالیاتی ادارے سودی نظام برقراررکھنے میں براہ راست ملوث ہیں، ان خیالات کااظہار گزشتہ روزچکدرہ پریس کلب میں جماعت اسلامی کے زیراہتمام سودسے پاک معاشی نظام کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے جماعت اسلامی کے تحصیل امیر سلطنت یار ایڈووکیٹ، جنرل سیکرٹری عطاء اللہ ایڈووکیٹ، الخدمت فاؤنڈیشن کے صوبائی نائب صدر فضل محمود،جمعیت علمائے اسلام کے ضلعی جنرل سیکرٹری جاوید اقبال، اتحاد علماء کے تحصیل صدر مولانا کلیم اللہ،رحیم اللہ ایڈووکیٹ، ڈاکٹر ظاہر، عزیزاللہ خان، خورشید علی خان اور سرتاج خان سمیت دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کیاہے، مقررین نے کہاکہ سودی نظام کے خلاف سیاسی جماعتوں سمیت پوری قوم کو متحد ہونے کی ضرورت ہے، انہوں نے کہاکہ سودی نظام کاآغاز دین اسلام کے ابتدائی دور میں یہودیوں نے کیاتھاجو اس وقت دنیابھر میں نافذ ہے، انہوں نے کہاکہ سودی نظامسرمایہ دار طبقے کو تھفظ فراہم کرتاہے اوراس کے سبب معاشرتی بگاڑ نے جنم لیاہے، مقررین سودی نظام کے حق میں سپریم کورٹ سے رجوع کرنے والے بینکوں سے اپنے کھاتے ختم کرنے پر زوردیتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیاکہ مذکورہ بینکوں کو سپریم کورٹ سے اپنی پٹیشن واپس لینے کاحکم دیں، آدینزئی بھر کے درجنوں سیاسی اور مذہبی شخصیات نے سیمینار میں شرکت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -