نوشہرہ‘ بیسک ایجوکیشن کی خواتین ٹیچرز تنخواہوں سے محروم

نوشہرہ‘ بیسک ایجوکیشن کی خواتین ٹیچرز تنخواہوں سے محروم

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ) بیسک ایجوکیشن کیمونٹی سکولز کی درجنوں خواتین ٹیچرز کئی ماہ سے تنخواہوں سے محروم ضلع بھر کے تقریباً50کے قریب سکولوں میں سینکڑوں طلبا و طالبا کا مستقبل تاریک ہونے کا خدشہ حکومت عید قربان پر تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے اقدامات اٹھائیں بصورت تنخواہوں کی عدم ادائیگی اپنے حق کے حصول کیلئے سڑکوں پر نکلنے سے بھی گریز نہیں کریں گے اس سلسلے میں بیسک ایجوکیشن کیمونٹی سکولز ٹیچرز کی صدر ریاست بیگم نے کہا ہے کہ ضلع نوشہرہ میں تقریبا 51 بیسک ایجوکیشن کیمونٹی سکولز کی خواتین اساتذہ انتہائی کم ماہانہ 8000روپے تنخواہ پر اس ضلعے کے بچوں اور بچیوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے میں مصروف ہیں، لیکن گذشتہ 6سے 7ماہ کا عرصہ ہونے کو ہے کہ ہمیں تنخواہیں نہیں ملی ہیں جس سے ان سکولوں میں پڑھانے والی خواتین اساتذہ گوں ناگوں مسائل سے دو چار ہیں انہوں نے کہا کہ ہم صوبائی حکومت کے چیف ایگزیکٹیو وزیر اعلیٰ محمود خان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ بیسک ایجوکیشن  کیمونٹی سکولز کی خواتین اساتذہ کو عید قربان پر تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے اقدامات اٹھائیں بصورت تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر ہم حکومت کے خلاف سڑکوں پر نکل کر دما دم مست قلندر کر دیں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -