سپریم کورٹ کا فیصلہ اچھا، پرویز الٰہی، حمزہ کا انتخاب عدالت نے کالعدم کر دیا: بابر اعوان 

سپریم کورٹ کا فیصلہ اچھا، پرویز الٰہی، حمزہ کا انتخاب عدالت نے کالعدم کر ...

  

لاہور،اسلام آبادر(جنرل رپورٹر، نیوز ایجنسیاں) سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج سپریم کورٹ کا بڑا اچھا فیصلہ ہے، جو چیزیں ہم چاہتے تھے وہ مانی گئی ہیں، پنجاب اسمبلی کا اجلاس رولز کے مطابق ہو گا کوئی پسند ناپسند نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ حمزہ شہباز نے بھی کہا ہے کہ کوئی سیاسی مداخلت اور پولیس استعمال نہیں کی جائے گی، 22 جولائی تک ہاؤس مکمل ہو جائے گا پھر وزیراعلیٰ کے الیکشن کیلئے اجلاس اسمبلی کی بلڈنگ میں ہی ہو گا کہیں اور نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ جو ماحول عدالت کے اندر بنا وہ عدالت کے باہر بھی رہنا چاہئے یہی جمہوریت ہے۔ تحریک انصاف کے پارلیمانی لیڈر میاں محمو الرشید نے کہا کہ عدلیہ نے صاف و شفاف الیکشن کی راہ ہموار کر دی ہے، امید کرتے ہیں کہ ضمنی الیکشن شفاف طریقے سے ہوں گیپاکستا ن تحریک انصاف کے سیکرٹری جنرل اسد عمر، مرکزی رہنما چوہدری فواد حسین  اور بابر اعوان نے کہاہے کہ سپریم کورٹ کی جانب سے وزیر اعلیٰ پنجاب کے انتخابات22 جولائی کو کرانے کے فیصلے نے  لوٹوں  اور پیسوں کی سیاست کو بھی ہمیشہ ہمیشہ کے لئے دفن کر دیا ،یہ  پاکستان کی جمہوریت کی بہتری کا فیصلہ ہے، خوشی ہے کہ جمہوریت کی بہتری کی یہ لڑائی بھی تحریک انصاف نے ہی لڑی ہے،  ہماراہی نہیں عدالتوں کا بھی فیصلہ ہے کہ حمزہ شہباز کبھی بھی آئینی، قانونی منتخب وزیر اعلیٰ نہیں رہے، حمزہ شہباز وزارت اعلیٰ کی کرسی پر تو بیٹھیں گے لیکن اب غیر قانونی طور پر حکومتی مشینری استعمال کرنے کی اجازت بالکل نہیں ہو گی،بڑھتی تیل کی قیمتیں مہنگائی، لوڈ شیڈنگ اور غلامی کی قیمت سے قوم کو جلد آزادی ملے گی ،عمران خان ہفتے کے روز غلامی سے  نجات اور مہنگائی کے خلاف احتجاج میں عوام کا اسلام آباد پریڈ گراؤنڈ میں انتظار کرینگے۔جمعہ کو سیکرٹری جنرل تحریک انصاف اسد عمر نے سپریم کورٹ کے باہر فواد چوہدری اور بابر اعوان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کی جانب سے وزیر اعلیٰ پنجاب کے انتخابات22 جولائی کو کرانے کے فیصلے پر حکام کو مبارک باد پیش کرتے ہیں۔ فیصلے نے  لوٹوں  اور پیسوں کی سیاست کو بھی ہمیشہ ہمیشہ کے لئے دفن کر دیا ہے۔ پاکستان کی جمہوریت کی بہتری کا فیصلہ ہے۔ خوشی ہے کہ جمہوریت کی بہتری کی یہ لڑائی بھی تحریک انصاف نے ہی لڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری ہی نہیں عدالتوں کا بھی فیصلہ ہے کہ حمزہ شہباز کبھی بھی آئینی، قانونی منتخب وزیر اعلیٰ نہیں رہے۔اس کے باوجود نہ کل ہم حمزہ کو منتخب وزیر اعلیٰ مانتے تھے لیکن اس سیاسی بحران سے بات آگے بڑھانے کے لئے ہم نے یہ بات قبول کر لی ہے کہ جب  تک ضمنی انتخابات نہیں ہو جاتے پانچ مخصوص نشستوں پر نوٹیفکیشن نہیں ہو جاتا یہ تب تک وہ صوبے میں قائم مقام وزیر اعلیٰ رہیں گے۔ اسد عمر نے کہا کہ ضمنی انتخابات جو لوٹوں کی چھوڑی ہوئی نشستوں پر ہو رہے ہیں اس پر الیکشن مکمل ہو جائے تو پھر ہاؤس مکمل ہو۔ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے ہمارے وکیل بابر اعوان کو یہ ہدایت کی کہ ہمیں الیکشن کمیشن اور دیگر اداروں پر تحفظات ہیں کیونکہ آج تک صوبے میں حکومتی مشینری کا بے دریغ استعمال کیا جا رہا ہے اور لوگوں پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے اور غیر قانونی طور پر ترقیاتی کام کروائے جا رہے ہیں ایسے افسروں کوتعینات کیا جا رہا ہے جن کی شہرت ٹھیک  نہیں  اور یہ سب اس لئے کیا جا رہا ہے کہ اس وقت عمران خان کی مقبولیت عوام میں ہے  

بابر اعوان

  

مزید :

صفحہ اول -