مخصوص لابی کو وزارت کیساتھ ہماری مثالی کوراڈ نیشن ہضم نہیں ہورہی 

مخصوص لابی کو وزارت کیساتھ ہماری مثالی کوراڈ نیشن ہضم نہیں ہورہی 

  

لاہور (انٹرویو:میاں اشفاق  انجم، تصاویر: ایوب بشیر) ہوپ نے کم وقت میں نا ممکن کو ممکن بنایا، مخصوص لابی کو وزارت کیساتھ ہماری مثالی کوارڈنیشن ہضم نہیں ہو رہی، پرا ئیو یٹ سیکٹر کو 60 فیصد کوٹہ دینا وزارت کا احسن اقدام ہے۔ جدہ، مدینہ ایئر پورٹ اور مکہ میں ہوپ کے نمائندے ضیوف الرحمن کی بھرپور خدمت اور رہنمائی کیلئے موجود ہیں، میری طرف سے جیب سے خرچ کرنے کی روایت کا خیر مقدم کیا جانا چاہیے تھا۔کوئی بلیک لسٹ نہیں ہو گا، ملک بھر کے حج آر گنائزر حاجی سے کی گئی کمٹمنٹ کو پورا کر کے حج آپریشن کو مثالی بنانے کی روایت برقرار رکھیں،ہم سعودی تعلیمات کے مطابق وزارت مذہبی امور کی زیر نگرانی میں کام کرنے کو سعادت سمجھتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار ہوپ پنجاب کے چیئرمین اور میزاب گروپ کے ڈائریکٹر امتیاز الرحمن چودھری نے سعودی عرب روانگی سے پہلے روزنامہ”پاکستان“ سے خصوصی گفتگو میں کیا۔انہوں نے کہا سعودی تعلیمات آنے میں جو تاخیر ہوئی اس سے سرکاری حج آپریشن بھی لیٹ شروع ہوا، ہمیں بھی کچھ نظر نہیں آ رہا تھا،مرکزی چیئرمین ہوپ مسعودی شنواری کی قیادت میں تمام زونل چیئرمین20دن تک اسلا م آباد میں رہے، بظاہر ناممکن نظر آنیوالے کاموں کو باہمی مشاورت، حکومت اور وزارت کے ذمہ داران سے طویل مذاکرات کے بعد ممکن بنایا۔وفاقی وزیر مذہبی امور مفتی عبدالشکور نے ثابت کیا وہ واقعی درویش اور حاجیوں سے محبت کرنیوالے ہیں۔وفاقی سیکرٹری آفتاب اکبر درانی اور جوائنٹ سیکرٹری حج عثمان سروش علوی کا کردار ہمیشہ مثبت رہا، غلطی ہو جانا بڑ ی بات نہیں ہم انسان ہیں، غلطی کی اصلاح کیلئے تنقید مثبت اقدام ہے مگر منفی انداز میں لینا اور پھر اس کو مخالفت برائے مخالفت منصوبے کے طور پر پھیلانا ٹریڈ کی خدمت نہیں، اللہ کے کرم اور توفیق سے تمام معاملات احسن انداز میں مکمل ہوئے ہیں، بنک گارنٹی کے حوالے سے غلط فہمی ہوئی اس کیلئے بھی آپشن دیئے گئے ہیں،انشاء اللہ کسی کیخلاف ایکشن ہو گا نہ کوئی بلیک لسٹ ہو گا۔ وفاقی وزیر،سیکرٹری اور جوائنٹ سیکرٹری متعدد بار کہہ چکے ہیں پاکستان سے جانیوالے حاجی ہمارے ہیں، خواہ وہ سرکاری ہوں یا پرائیویٹ،2006ء سے اب تک پاکستان کی پرائیویٹ حج سکیم نے دنیا بھر میں لوہا منوایا ہے، امسال بھی روایت برقرار رکھیں گے، حج آرگنائزر حاجی سے کی گئی کمٹمنٹ کی طرف توجہ دیں۔

امتیازالرحمن چودھری

مزید :

صفحہ آخر -