قائد اعظم سولر پاور کمپنی میں بے ضابطگیوں پرتحقیقات کا آغاز 

قائد اعظم سولر پاور کمپنی میں بے ضابطگیوں پرتحقیقات کا آغاز 
قائد اعظم سولر پاور کمپنی میں بے ضابطگیوں پرتحقیقات کا آغاز 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )محکمہ اینٹی کرپشن نے قائد اعظم سولر پاور کمپنی میں بے ضابطگیوں کے انکشاف پر تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے ۔

نجی ٹی وی "جیو نیو ز "نے اینٹی کرپشن حکام کے حوالے سے بتایا کہ قائد اعظم سولر پاور کمپنی کے چیف ایگزیکٹیو افسر ، مینجر پلانٹ ، مینجر ہیومن ریسورس کو تحقیقات میں شامل کیا گیا ہے جبکہ اہم آسامیوں پر تعیناتی کرنے والی کنسلٹنٹ کمپنی بھی تحقیقات میں شامل ہے ۔

رپورٹ کے مطابق مختلف اضلاع کے 6دیہات میں سولر انرجی فراہم کرنے کے منصوبے کی تحقیقات کی گئی ہیں ،منصوبے کے تحت ہر گاوں میں 100کلو واٹ بجلی فراہم کرنی تھی،منصوبے میں من پسند ٹھیکیداروں کو پروجیکٹ لگانے کا ٹھیکہ دیا گیا.

نجی ٹی وی کے مطابق میٹریل کے معیار سے متعلق بھی تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے ، تحقیقات میں ایک کنسٹرکشن کمپنی کو بھی شامل کیا گیا ہے، تحقیقات کیلئے تما م افراد دکو نوٹس ارسال کر دیئے گئے ہیں ، نوٹسز میں تمام افراد کو 5جولائی کو پیش ہونے کا حکم دیا گیا ہے،اینٹی کرپشن حکام کے مطابق کمپنی میں اعلیٰ عہدیداروں پر تعیناتی کیلئے شفاف طریقہ کار نہیں اپنایا گیا ۔

مزید :

قومی -