خصوصی افراد کے بنیادی مسائل سے مسلسل چشم پوشی درست نہیں،سجاد چھینہ

خصوصی افراد کے بنیادی مسائل سے مسلسل چشم پوشی درست نہیں،سجاد چھینہ

لاہور(پ ر) سی اوایم (کنوے آف مرسی)کے مرکزی چیئرمین چودھری سجادحسین چھینہ ،پیٹران چیف رانااحمدعتیق انور ،صدراشتیاق احمدورک ،سینئر نائب صدرطاہرمظفرگجراورجنرل سیکرٹری محمدعنصرعلی نے کہا ہے کہ خصوصی افراد کے بنیادی مسائل سے مسلسل چشم پوشی درست نہیںکسی ملک اور قوم کے مہذب اورمتمدن ہونے کااندازہ اس کے خصوصی افراد کامعیارزندگی دیکھ کرلگایا جاسکتا ہے ہمارے ہاں خصوصی افراد کے نام پرفنڈزوصول کرنیوالی بیشتراین جی اوز ان پرایک ٹیڈی پیسہ تک صرف نہیں کرتیں جوانتہائی زیادتی ہے ۔قدرت کی پیداکردہ نعمتوں اور جدیدشہری سہولیات پرخصوصی افرادکا عام شہریوں سے زیادہ حق ہے ریاست کوخصوصی افرادکی حق تلفی روکنے کیلئے ٹھوس قوانین بناناہوں گے۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کی خاطرخواہ سرپرستی کے بغیر خصوصی افراد کی حقیقی معنوں میں بحالی کاخواب شرمندہ تعبیر نہیں ہوگاافرادنے انفرادی اوراجتماعی حیثیت میں خصوصی افراد کے ساتھ کس طرح پیش آنا ہے اس کی تعلیم وتربیت کااہتمام کرنے کیلئے نصاب تعلیم میں بطورخاص ایک باب شامل کیا جائے جس بھی معاشرے میں خصوصی افراد کو مناسب ماحول کے ساتھ ساتھ جدیدسہولیات کی فراہمی یقینی بنائی گئی وہاںانہوں نے اپنی خدادادصلاحیتوں کے اظہار سے سب کوحیران کردیاحکومت کی طرف خصوصی افراد کیلئے کی جانیوالی اصلاحات ناکافی ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4