کمسن لڑکیوں کا ریپ اورقتل کی تحقیقات وفاق کرے،اترپردیش وزیراعلیٰ

کمسن لڑکیوں کا ریپ اورقتل کی تحقیقات وفاق کرے،اترپردیش وزیراعلیٰ

نئی دہلی(این این آئی)بھارتی ریاست اتر پردیش کے وزیرِاعلیٰ نے سفارش کی ہے کہ دو لڑکیوں کے ساتھ مبینہ اجتماعی ریپ کے بعد درخت سے لٹکا کر قتل کرنے کے واقعے کی تفتیش وفاقی سطح پر ہونی چاہئیے،بھارتی میڈیاکے مطابق اتر پردیش کے وزیراعلیٰ اکھیلیش یادو نے ایک بیان میں کہاکہ بچیوں کے خاندان کے مطالبے کو مانتے ہوئے وزیرِاعلی نے وفاقی حکومت سے سفارش کی ہے کہ وہ اس واقعے کی تفتیش کرے،بیان کے مطابق حکومت کے اس وعدے کے بعد کہ دونوں بچیوں کے مبینہ گینگ ریپ اور قتل کی تحقیقات کے لیے ایک خصوصی عدالت تشکیل دی جائے گی جو اس مقدمے کا فیصلہ ہنگامی بنیادوں پر کرے گی۔ اس سے قبل بھارت کی وزارت داخلہ کے ایک ترجمان نے بتایا تھا کہ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے شمالی ریاست اترپریش میں دو لڑکیوں کے ساتھ مبینہ اجتماعی ریپ کے بعد درخت سے لٹکا کر قتل کرنے کے واقعے کی اترپردیش حکومت سے واقعے کی رپورٹ طلب کی ہے۔واضح رہے کہ واقعہ سے مشتعل گاو¿ں والوں نے آٹھ گھنٹے کے بعد مناسب کارروائی کی یقین دہانی کے بعد پولیس کو درخت سے لڑکیوں کی لاشیں اتارنے دی تھیں۔دہلی میں اتر پردیش کی حکومت کے دفتر کے باہر انسانی حقوق کی تنظیموں، طالب علم تنظیموں اور کئی دیگر سماجی تنظیموں نے جمعے کو مظاہرہ بھی کیا تھا۔ اس کے علاوہ سماجی کارکنوں نے انتظامیہ اور حکومت پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ جنسی تشدد کے معاملات سے نمٹنے کے لیے مناسب اقدامات نہیں کر رہی۔

مزید : عالمی منظر