واسا کے عارضی ملازمین کی تنخواہوں کا نیا شیڈول، واشنگ الاؤنس میں 200فیصد اضافہ

واسا کے عارضی ملازمین کی تنخواہوں کا نیا شیڈول، واشنگ الاؤنس میں 200فیصد اضافہ

 لاہور (جاوید اقبال) واسا کے ورک چارج اور کنٹریکٹ ملازمین کے لئے واسا انتظامیہ نے خوشخبری جاری کر دی ہے جس کے لئے تنخواہوں کی ادائیگی کا نیا شیڈول جاری کر دیا گیا ہے جبکہ واشنگ الاؤنس میں200فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے جو یکم جولائی سے لاگو ہو گا۔ دوران ڈیوٹی وفات پانے والے سیور مین کے اہل خانہ کو25لاکھ ملیں گے۔ ورک چارج اور کنٹریکٹ ملازمین کی ماہانہ تنخواہ ہر ماہ کی20تاریخ کو ادائیگی کو یقینی بنانے کے لئے ڈویژن ڈائریکٹر اور ایکسین پابند ہوں گے۔ مقررہ تاریخ تک ادائیگی کا بندوبست نہ کرنے والے ڈویژن کے ڈائریکٹر اور ایکسین کی تنخواہ بند کر دی جائے گی، شو کاز بھی ملے گا جس کا منیجنگ ڈائریکٹر نصیر چودھری نے نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے جس پر عمل درآمد آئندہ ماہ سے ہو گاعمل نہ کرانے والے ڈائریکٹر اور ایکسین اور ڈائریکٹر فنانس کے خلاف کارروائی ہو گی۔ ایم ڈی واسا نے یہ ایکشن ورک چارج اور کنٹریکٹ ملازمین کی طرف سے شکایات پر لیا ہے جس میں ایم ڈی کو فریق بنایا گیا تھا۔ لاہور میں واسا کی 9ڈویژنوں اور26 سب ڈویژنوں میں سینکڑوں ورک چارج ملازمین کام کر رہے ہیں ان سمیت کنٹریکٹ ملازمین کی تنخواہیں کئی کئی ماہ سے ادا نہیں کی جاتیں جس سے ان کی کارکردگی زیرو ہے اور ان کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہو گئے ہیں۔ بعض ورک چارج ملازمین کے گھروں میں فاقوں کی نوبت ہے جبکہ سیور مین جو کئی کئی فٹ گہرے میں سیوریج کی لائنوں میں اُتر کر گٹروں کی صفائی کرتے ہیں ان کو واشنگ الاؤنس صرف100روپے ماہانہ ملتا ہے جس پر ایم ڈی نصیر چودھری نے فوری ایکشن لیتے ہوئے واشنگ الاؤنس میں200فیصد اضافہ کر دیا ہے جبکہ ورک چارج ملازمین کو ہر ماہ کی20تاریخ کو ادائیگی کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔ اس حوالے سے ایم ڈی نصیر چودھری سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ ملازمین کو زیادہ سے زیادہ ریلیف جو میری حد تک دیا جائے گا۔ سیور مین کے واشنگ الاؤنس میں200فیصد اضافہ کیا جا رہا ہے جبکہ ایسے سیور میں جو دوران ڈیوٹی وفات پا جائیں گے ان کے لواحقین کو25لاکھ روپے دیئے جائیں گے جس کا وعدہ خواجہ احمد حسان نے کیا تھا اس کی منظوری کے لئے سمری تیار کر کے اتھارٹی کو بھجوا دی گئی ہے۔ ایم ڈی نے کہا کہ ہر ماہ کی20تاریخ کو ورک چارج ملازمین کو تنخواہیں ادا کرنے کے متعلقہ ڈویژن کے ڈائریکٹر اور ایکسین پابندی ہوں گے، خلاف ورزی کے مرتکب افسروں کی تنخواہیں بند کر دوں گا اور شوکاز بھی دیئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کسی ملازم کو نہیں نکالا جائے گا اور نہ ہی واسا کی نجکاری ہو گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1