سول سیکرٹریٹ ملازمین آج سیاہ پٹیاں باندھ کر قلم چھوڑ ہڑتال کریں گے

سول سیکرٹریٹ ملازمین آج سیاہ پٹیاں باندھ کر قلم چھوڑ ہڑتال کریں گے

 لاہور(فورم رپورٹ:محمد نواز سنگرا/تصاویر ذیشان منیر)سول سیکرٹریٹ میںآج ملازمین سیاہ پٹیاں باند ھ کر قلم چھوڑ ہڑتال کریں گے تنخواہوں میں 50فیصد اضافہ،خیبر پختونخواہ کی طرز پر کلریکل کیڈر سمیت سکیل ایک سے 16 تک ملازمین کی فوری اپ گریڈیشن اوربجٹ میں تمام ایڈہاک ریلیف الا وئنسز کو بنیادی تنخواہ میں ضم کیا جائے وگرنہ بجٹ میں ہیرا پھیری اور ملازمین کے جائز مطالبات تسلیم نہ ہونے پر بھوک ہڑتال اور سول سیکرٹریٹ دفاتر کی تالا بندی کی جائے گی ان خیالات کا اظہار پنجاب سول سیکرٹیریٹ ایمپلائز کوآرڈینیشن کونسل کے رہنماؤں نے پاکستان فورم میں کیاچیئرمین پنجاب سول سیکرٹریٹ ایمپلائز کوآرڈینیشن کونسل غلام مصطفی بٹ نے کہا کہ حکومت الفاظ کی ہیرا پھیری والابجٹ پیش کرنے سے باز رہے ورنہ اس بجٹ کو مسترد کرکے بھر پور احتجاج کیا جائے گا کونسل کے متفقہ فیصلیکیمطابق سیکرٹریٹ میں دو گھنٹے روزانہ قلم چھوڑ ہڑتال ہوگی اورتمام ملازمین سیاہ پٹیاں باندھ کر کام کریں گیسینئر نائب صدر راجہ سہیل نے کہا کہ حکومت بجٹ میں تمام ایڈہاک الاؤنسز کو ضم کر کے پے سکیل ریوائز کرے ایڈیشنل سیکرٹری جنرل چوہدری غلام غوث نے کہا کہ صوبہ خیبر پختونخواہ کی طرز پر کلریکل کیڈر کی فی الفور اپ گریڈیشن کی جائے اور تنخواہوں میں کم از کم 50فیصد اضافہ کیا جائے پر یس سیکرٹری عبدالکریم اعوا ن نے کہا کہ دیگر صوبوں کی طرح پنجاب کے ملازمین کو بھی تمام مراعات دی جائیں زین خان اور صاحب خان نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ سول سیکرٹریٹ کے تمام ملازمین کو سند ھ حکومت کی طرز پر یوٹیلٹی الاؤنس دینے کا اعلان کرے تاکہ امتیازی سلوک کا خاتمہ ہو سکے بختیار احمد،اعظم خان اور نذیر احمد سمیت تمام عہدیداروں نے کہا کہ آج سے تمام ملازمین ہڑتال میں بھر پور حصہ لیں گے اور سیاہ پٹیاں باند ھ کرتمام مطالبات کی منظوری تک ہڑتال جاری رکھیں گے کیونکہ حکومت ہر مرتبہ ملازمین سے کئے وعدے بھول جاتی ہے گریڈ ایک سے 16تک کے ملازمین کے بچے بھی ہیں اور پیٹ بھی لگے ہوئے ہیں کم تنخواہ پر گزارہ نہ ہونے پر حکومت بتائے ملازمین خود کشیاں نہ کریں تو کریں کیا؟اگر حکومت نے گریڈ ایک سے 16تک کے ملازمین کے زخموں پر مرہم نہ رکھے توبھوک ہڑتال کریں گے جو بعد میں دھرنوں میں تبدیل ہوجائے گا اور سول سیکرٹریٹ دفاتر کی تالا بندی سمیت حقوق کے حصول کیلئے تمام ہتھکنڈے بروئے کار لائے جائیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1