پیپلز پارٹی کے قائدین پر مقدمات انتقامی کارروائی ہے،ثمینہ خالدگھرکی

پیپلز پارٹی کے قائدین پر مقدمات انتقامی کارروائی ہے،ثمینہ خالدگھرکی

لاہور( پ ر) پیپلز پارٹی لاہور کی صدر ثمینہ خالد گھرکی نے پیپلز پارٹی کے قائدین سابق وزراء اعظم سید یوسف رضا گیلانی ‘ راجہ پرویز اشرف اور سابق سینئر وفاقی وزیر مخدوم امین فہیم پر قائم مقدمات کو سیاسی انتقامی کارروائی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ ماضی کی سیاست سے سبق سیکھتے ہوئے انتقامی سیاست کو ہمیشہ ہمیشہ کے لئے دفن کردیا جائے انتقامی سیاست ملکی مفاد میں نہیں ہے پیپلز پارٹی کے قائدین پر مقدمات بنانے سے میثاق جمہوریت کی نفی ہو گی اور جمہوری عمل کو بھی خطرات لا حق ہو سکتے ہیں ہم اپنے قائدین پر مقدمات بنانے کے عمل پر خاموش نہیں رہیں گے ثمینہ خالد گھرکی کا مزید کہنا تھا کہ جو لوگ حکومت اور پیپلز پارٹی کے درمیان غلط فہمیاں پیدا کر نا چاہتے ہیں حکومت کو ایسے عناصر پر کڑی نظر رکھنی ہو گی کیونکہ پیپلز پارٹی نے اپنے پانچ سالہ دور حکومت میں ایک بھی سیاسی قیدی نہیں بنایا اور تاریخ رقم کی بلکہ پیپلز پارٹی کی قیادت نے تو اپنے دور حکومت کے دوران ان لوگون کو بھی معاف کردیا جن لوگوں نے ماضی پر ان پر من گھڑت اور بے بنیاد مقدمات بنائے تھے جبکہ ہماری قیادت نے ان جھوٹے مقدمات کے باوجود عدلیہ میں پیش ہو کر باعزت بریت حاصل کی اور ثابت کیا کہ وہ عدلیہ کا بھی احترام کرتے ہیں اور تاریخ میں بھی سر خرو ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ ہمارے لیڈرز پر قائم مقدمات کو فی الفور ختم کیا جائے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1