ترقی کے سفر کیخلاف کوئی دھرنا یا احتجاج کامیاب نہیں ہو سکتا،شہباز شریف

ترقی کے سفر کیخلاف کوئی دھرنا یا احتجاج کامیاب نہیں ہو سکتا،شہباز شریف

                               لاہور(پ ر)وزیراعلی محمد شہبازشریف نے کہاہے کہ ترقی کے سفر کے خلاف کوئی دھرنایا احتجاج کامیاب نہیں ہوسکتا- عوام کے فلاحی منصوبوں پر بلاجواز تنقید کرنے والوں کے دور حکومت میں بننے والے منصوبے ترقی کے مینار نہیں بلکہ کرپشن کے قبرستان تھے- ہماری سمت درست ہے، عوام جانتے ہیں کہ خدمت کون کر رہاہے اور احتجاجی سیاست کو ن؟ماضی کے حکمرانوں نے قوم کا مستقبل داﺅ پر لگایا اور نندی پور پاور پراجیکٹ کے حوالے سے بد ترین مجرمانہ غفلت برتی-اگر ےہ منصوبہ 3برس قبل مکمل ہوتا تو ملک کو 165ارب روپے کا معاشی نقصان نہ اٹھانا پڑتا اور منصوبے میں تاخیر کے باعث غریب قوم کے 30ارب روپے زائد نہ خرچ کرنا پڑتے-پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت نیک نیتی او رخلوص کے ساتھ عوام کی خدمت کر رہی ہے - اﷲ تعالی نے عوام کی خدمت کاموقع دیا ہے اور ہم خدمت خلق کے لئے کوئی کسر اٹھا نہیں رکھیںگے-ےہ وطن ہماراہے ہم سب نے مل کر اسے سنوارنا ہے اور نئی نسل کو مضبوط و روشن پاکستان دیناہے- وزیراعلی محمد شہباز شریف نے ان خیالات کا اظہار سندھ ،خیبر پختونخواہ اور بلوچستان کے صحافیوںکالم نگاروں اوردانشوروں کے نمائندہ وفدسے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا-توانائی بحران کے حوالے سے تیز رفتاری سے اقدامات اور پنجاب میں ترقیاتی منصوبوںپر صحافیوں کے وفد نے وزیراعلی شہبازشریف کو مبارکباد دی-پریس سیکرٹری وزیراعلی شعیب بن عزیز ،سیکرٹری اطلاعات مومن آغا اورڈی جی پی آر اطہر علی خان بھی اس موقع پر موجود تھے-وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ نندی پور پاور پراجیکٹ کی 7ماہ کی ریکارڈ مدت میں تکمیل بہترین ٹیم ورک کا نتیجہ ہے-7ماہ میں نندی پور پاور پراجیکٹ کے مردہ منصوبے میں جان پڑ سکتی ہے تو 4برس میںملک سے اندھیرے بھی دور ہو جائیں گے،پنجاب میں لگنے والے منصوبے پورے پاکستان اورپاکستانی قوم کے لئے ہیں کیونکہ یہ ملک ہم سب کاہے اورہم سب نے مل کر ملک کا مستقبل تابناک بنانا ہے -انہوں نے کہاکہ حکومت کی ٹھوس معاشی پالیسیوں کے مثبت نتائج برآمد ہورہے ہیں اور معیشت میں بہتری آ رہی ہے- زر مبادلہ کے ذخائر 13ارب ڈالر سے تجاوز کر چکے ہیں اور ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں استحکام آیا ہے-انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت توانائی بحران کے خاتمے کے لئے سنجیدگی سے آگے بڑھ رہی ہے اور ملک بھر میں توانائی کے منصوبے تیزی سے لگائے جا رہے ہیں-وفاق نے داسو اور دیا میر بھاشا ڈیم کے لئے بھی 30ارب روپے مختص کئے ہیں-انہوںنے کہاکہ کراچی- لاہور موٹروے کے لئے وفاقی حکومت نے 55ارب روپے مختص کئے ہیں اور اس بڑے منصوبے کا آغاز کراچی سے کیا جا رہا ہے-انہوں نے کہاکہ پنجاب حکومت نے این ایف سی ایوارڈ پر اتفاق رائے کے لئے اپنے حصے کے 11ارب روپے سالانہ دیگر صوبوں کو رضاکارانہ طور پر دئیے ہیں اورچار برس میں پنجاب 44ارب روپے کی اپنے حصے کی رقم دیگر صوبوں کو دے چکا ہے - انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت ایک وژن کے تحت ملک کو درپیش مسائل کے حل کے لئے مخلصانہ اقدامات اٹھا رہی ہے ۔صحافیوں نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہاکہ وزیراعلی شہبازشریف انقلابی لیڈر ہےں اور عوا م کی فلاح و بہبود کے لئے تاریخی اقدامات کر رہے ہیں-انہوںنے عوامی خدمت کے منصوبوں پر وزیراعلیٰ پنجاب کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہاکہ کاش شہبازشریف جیسا وزیراعلی دیگر صوبوں کو بھی نصیب ہوتا -وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف سے چین کے معروف شینگ ڈونگ رویائی گروپ( Shangdong Ruyi )، ہیوانگ شینگ ڈونگ (Huaneng )کمپنی اور سیپکو ون Sepco-1) (کے وفدنے ملاقات کی اور یقین دہانی کرائی کہ وہ توانائی کے منصوبوں کو مقررہ مدت میں مکمل کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے۔وزیراعلی محمد شہبازشریف نے چینی وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان کو اپنی صنعتوں کا پہیہ رواں دواں رکھنے ،ملک سے غربت ، بےروز گاری اوراندھیرے دور کرنے کے لئے توانائی کی ضرورت ہے او رملک کو درپیش توانائی بحران کو جلد سے جلد حل کرنا چاہتے ہیں- توانائی بحران سے نمٹنے کے لئے ہر ضروری قدم اٹھایا جا رہاہے- وزیراعظم محمد نوازشریف کی قیادت میں حکومت نے توانائی بحران کے ´خاتمے کے لئے دن رات ایک کر دیا ہے- وزیراعظم کی باہمت ، پر عزم او رحوصلہ مند قیادت نے پاکستان کی تمام اکائیوں سمیت آزاد کشمیر او ر گلگت بلتستان میں توانائی کے حصول کے منصوبے تیزی سے مکمل کئے جا رہے ہیں-انہو ںنے کہاکہ پاکستان او رچین کی دوستی معاشی تعلقات میں بدل چکی ہے- چین نے پاکستان کو توانائی بحران سے نکالنے کے لئے بے پایاں تعاون فراہم کر کے مخلص اور سچے دوست ہونے کا حق اداکر دیا ہے-بلاشبہ چین نے ماضی میں بھی پاکستان کے مختلف شعبوں کی ترقی میں لائق تحسین کردار ادا کیا ہے او رمشکل کی ہر گھڑی میں پاکستان کا ساتھ نبھایاہے-آج پاکستان کو توانائی کی کمی کے شدید مسئلے کا سامناہے توچین مخلص دوست کی طرح پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے-پاکستان بالخصوص پنجاب میں چین کی متعدد کمپنیاں توانائی سمیت مختلف شعبوں میں اربوں ڈالر کی سرماےہ کار ی کر رہی ہیں-پاکستان کے لئے 32ارب ڈالر کا تاریخی اقتصادی پیکیج بھی چین کی قیادت کا پاکستان کے عوام سے لگاﺅ او رمحبت کی اعلی مثال ہے-چین پاکستان کو توانائی بحران سے چھٹکارا دلانے کے لئے ہر ممکن تعاون فراہم کر رہاہے-چین کی کمپنیوں کے وفد نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور چین کے مابین دوستی کا رشتہ مضبوط سے مضبوط تر ہورہاہے اور چینی کمپنیوں کی ےہاں سرماےہ کاری سے دونوں ممالک کے تجارتی تعلقات مزید مستحکم ہوںگے -انہوںنے کہاکہ ساہیوال میں 1320میگا واٹ کول پاورپلانٹ کے منصوبے کو مقررہ وقت کے اندر مکمل کریں گے اوراس ضمن میں چینی کمپنیوں نے دستاویزات پر دستخط کرکے ساہیوال کول پاور پراجیکٹ کو مقررہ مدت میں مکمل کرنے کی یقین دہانی کرائی- -وفد میں شینگ ڈونگ رویائی گروپ کے چیئرمین یافو کیو، وانگ وینژونگ (Mr.Wang Wenzong ) جنرل منیجر ہیوانگ شینگ ڈونگ کمپنی ، وانگ شومن (Mr. Wang Shoumin ) جنرل منیجر سیپکو -1 ، جاری لیو (Mr. Jerry Liu ) نائب صدر رویائی گروپ اور دیگر عہدیداران شامل تھے۔ ایڈیشنل سیکرٹری توانائی ،چیئرمین سرماےہ کاری بورڈ اور دیگر متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے-وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف کی زیر صدارت ےہاں اعلی سطح کا اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزیر دفاعی پیداوار رانا تنویر حسین نے خصوصی طو رپر شرکت کی -وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پنجاب حکومت صوبے میں امن وامان کی صورتحال کو مزید بہتر بنانے کے لئے جد ید ٹیکنالوجی سے ا ستفادہ کررہی ہے-کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کا منصوبہ صوبے میں امن وامان کے قیام کے حوالے سے انتہائی اہمیت کا حامل ہے او راس منصوبے پر تیزی سے کام کیا جارہا ہے۔کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کا منصوبہ جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے جرائم کی روک تھام میں ایک سنگ میل کی حیثیت رکھتاہے -انہوںنے کہاکہ ساہیوال میں جدید ترین ہائی سکیورٹی جیل تعمیر کی جا رہی ہے جہاں پر جدید ترین آلات نصب کئے جائیں گے- ٹیلی کمیونیکیشن اورانفارمیشن ٹیکنالوجی سے استفادہ کر کے جرائم میں کمی لائی جا سکتی ہے-نیشنل ریڈیو ٹیلی کمیونیکیشن کارپوریشن کے منیجنگ ڈائریکٹر نے ٹیلی کمیونیکیشن کے جدیدآلات اورادارے سے متعلق بریفنگ دی- اجلاس میںصوبائی وزیر قانو ن و بلدیات رانا ثناءاﷲ ، انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب، سیکرٹری داخلہ، آئی جی جیل خانہ جات اور متعلقہ حکام نے شرکت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہاہے کہ آئندہ مالی سال 2014-15کے صوبائی بجٹ میں عام آدمی کی فلاح و بہبود کے منصوبوں کےلئے زیادہ فنڈز مختص کئے جائیں گے- تعلیم، صحت اور دیگر سماجی شعبوں کی بہتری کے لئے زیادہ وسائل مختص کئے جائیں گے اور آئندہ مالی سال کے بجٹ میں عام آدمی کی فلاح وبہبود پر زیادہ توجہ دی جائے گی-وہ ےہاں اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے جس میں مالی سال 2014-15 کے صوبائی بجٹ کے حوالے سے تجاویز کا تفصیلی جائزہ لیا گیا -اجلاس میں صوبائی وزیر مجتبیٰ شجاع الرحمن، وزیر بلدیات و قانون رانا ثناءا ﷲ خان، ایم این اے حمزہ شہبازشریف ، معاون خصوصی عزم الحق، پارلیمانی سیکرٹری رانا بابر حسین، چیف سیکرٹری اور متعلقہ حکام نے اجلاس میںشرکت کی-وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عوام کو ریلیف اور بنیادی سہولتوں کی فراہمی پاکستان مسلم لیگ(ن) کی حکومت کا ایجنڈا ہے او رعام آدمی کی فلاح و بہبود پر خطیر وسائل صرف کئے جا رہے ہیں-حکومت کے فلاحی پروگراموں اور میگا پراجیکٹس کی تکمیل سے عوام مستفید ہورہے ہیں-انہو ںنے کہاکہ آئندہ مالی سال2014-15 کے بجٹ میں عام آدمی پر بوجھ نہیں ڈالا جائے گا بلکہ محروم معیشت طبقات کے معیار زندگی میں بہتری لانے کےلئے اقدامات کئے جائیں گے-انہوںنے کہاکہ ٹیکس وصولی نظام میں خامیوں کو دور کرکے اسے بہتر بنایا جائے گا اور ٹیکس وصول کرنے والے تمام اداروں میں آٹو میشن نظام متعار ف کرایاجائے گا-وزیراعلی نے چیئرمین پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کو ہدایت کی کہ ٹیکس وصولی نظام کی آٹو میشن کے لئے جامع پلان تیار کیاجائے -ٹیکس وصولی نظام کو آسان بنانے کے لئے بھی سفارشات مرتب کی جائیں-انہوں نے کہاکہ پنجاب کے وسائل میں اضافہ کی بڑی گنجائش موجود ہے او راس مقصد کے لئے موثر حکمت عملی کی ضرورت ہے-وزیراعلی نے صوبے کے وسائل میں اضافے اور ٹیکس نظام کو مزید بہتر بنانے کےلئے اعلی سطح کی کمیٹی تشکیل دےتے ہوئے ہدایت کی کہ تمام متعلقہ ادارے ٹیکس وصولی کا ہدف مقر ر کرکے اس کے حصول کےلئے جامع منصوبہ بندی کریں- انہوں نے کہاکہ پسماندہ علاقو ںکی ترقی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے او ران علاقو ں کی ترقی کے لئے زیادہ وسائل رکھے جائیں- انہوں نے کہاکہ امن کے بغیر سرماےہ کاری اور تیز رفتار ترقی ممکن نہیں اس لئے امن وامان کی بہتری کے لئے پیٹ کاٹ کر وسائل فراہم کریں گے-سیکرٹری خزانہ نے بجٹ کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی-

مزید : صفحہ اول