سکول جانے پر مالک کا چوتھی جماعت کے طالبعلم پر تشدد

سکول جانے پر مالک کا چوتھی جماعت کے طالبعلم پر تشدد
سکول جانے پر مالک کا چوتھی جماعت کے طالبعلم پر تشدد

  


کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک ) نواحی علاقے مومن آباد میں سکول جانے اور چوری کے الزام پر چوتھی جماعت کے طالب علم کو مالک نے تشدد کا نشانہ بنایا۔میڈیا رپورٹس کے مطا بق سید ابراہیم شاہ اپنی بیوہ ماں کا ہاتھ بٹانے کے لیے سکول کے بعد درزی کی دکان پر کام کرتا تھا تاہم پڑھائی میں حرج ہونے پر اس نے کام چھوڑ دیا جس پر اس کے استاد نے اس کو دکان میں بند کرکے بری طرح تشدد کانشانہ بنایا اور 15 ہزار روپے چوری کرنے کا الزام بھی لگا دیا۔ابراہیم کی بیوہ ماں لوگوں کے گھروں میں کام کرتی ہیں، اس نے اپنے بیٹے کو تعلیم میں حرج ہونے کے باعث کام پر جانے سے روکا تھا جس پر اسے تشدد کا نشانہ بنایا گی۔قائد آباد پولیس سٹیشن کے ایک افسر زلف علی کے مطابق ابتدائی طور پر دو ملزمان کو  گرفتار کر لیا گیا تھا تاہم عدالت نے انہیں ضمانت پر رہا کردیا ہے۔ابراہیم کی والدہ نے اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کہ انہیں انصاف دیا جائے جبکہ ابراہیم کے کزن نے الزام عائد کیا ہے کہ ملزمان صلح کیلئے دباﺅڈال رہے ہیں۔

مزید : تعلیم و صحت