موٹاپے سے بچنا ہے تو پتلے افراد سے دور رہیں

موٹاپے سے بچنا ہے تو پتلے افراد سے دور رہیں
موٹاپے سے بچنا ہے تو پتلے افراد سے دور رہیں

  

صوفیہ (مانیٹرنگ ڈیسک) نزلہ، زکام اور کھانسی وغیرہ کے جراثیموں کے ذریعے ایک سے دوسرے شخص تک پھیلنے کے بارے میں تو ہم سب جانتے ہیں لیکن اب معلوم ہوا ہے کہ موٹاپہ بھی کچھ اسی طرح  پھیل سکتا .سائنسدانوں نے ایک ایسا وائرس دریافت کیا ہے  جو موٹاپے کو بھی ایک سے دوسرے شخص تک پہنچا سکتا ہے۔ چیکوسلواکیا کے سائنسدانوں نے معلوم کیا ہے کہ ایڈینو وائرس 36 نامی جراثیم نہ صرف عام نزلہ زکام اور کھانسی پھیلاتا ہے بلکہ موٹاپے کو بھی پھیلانے کا سبب بنتا ہے۔ ان ماہرین نے ترقی یافتہ ممالک میں پچھلے 30 سال کے دوران موٹاپے کے بے پناہ پھیلاﺅ پر تحقیق کی اور اس وائرس کے موٹاپے کے پھیلاﺅ میں کردار کا پتا چلا لیا۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ یہ وائرس خلیوں میں گھس کر انہیں زیادہ چکنائی جمع کرنے پر مائل کرتا ہے اور بعض خلیات کو چربی کے خلیات میں بدل دیتا ہے۔ ماہرین کا خیال ہے کہ یہ وائرس موٹاپے کے پھیلاﺅ کی ایک بڑی وجہ ہو سکتا ہے لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ وائرس کسی بھی شخص کے جسم میں داخل ہونے کے بعد اسے تو اگلے 20 سالوں تک موٹا کرتا رہتا ہے لیکن اس کے جسم سے دوسروں تک منتقل نہیں ہوتا جبکہ نزلے، زکام اور کھانسی کے شکار دبلے پتلے افراد سے دوسروں میں تیزی سے منتقل ہوتا ہے یعنی اس وائرس سے بچنے کیلئے آپ کو موٹے لوگوں سے نہیں بلکہ دبلے لوگوں سے بچنا پڑے گا۔

مزید : تعلیم و صحت