رمضان المبارک سے قبل منافع خور سر گرم ،زخیرہ اندوزی عروج پر

رمضان المبارک سے قبل منافع خور سر گرم ،زخیرہ اندوزی عروج پر

  

لاہور ( اسد اقبال )رمضان المبارک قر یب آتے ہی منافع خور مافیا نے کمر کس لی اور اشیائے سرف کی قیمتو ں میں مصنوعی اضافہ کر نے کے لیے تھو ک مارکیٹوں میں قلت پیدا کرتے ہوئے زخیرہ اندوزی کا سلسلہ شروع کر دیا ہے جبکہ پرائس کنٹرول مجسٹر یٹس خامو ش تماشائی بنے دفاتر تک محدود ہیں جن اشیاء کی قیمتو ں میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے ان میں اجناس ، مشروبات ، بیسن ، چینی ،مصالحہ جات ،گھی ،سبزیاں اور پھل شامل ہیں۔جس کے پیش نظرشہری مہنگے داموں اشیائے خوردونوش خریدنے پر مجبورہیں شہریو ں کا کہنا ہے کہ حکو مت رمضان سے قبل مہنگائی کر نے والو ں کا محاسبہ کرے اور شہریو ں کو سستے دامو اشیائے خور دو نوش کی فراہمی کے لیے میکنزم تر تیب دے تاکہ شہری مصنوعی مہنگائی کے چنگل سے نکل سکیں۔سپیشل مجسٹر یٹ درجہ اول اقبال شاہ کا کہنا ہے کہ ڈی سی او لاہور کی سخت ہدایات ہیں کہ رمضان المبارک میں گراں فروشی کو روکنے کے لیے ہر قسم کے اقدامات بروئے کار لائیں جس کے لیے تمام پہلو ؤ ں کا جائزہ لیتے ہوئے ضلعی حکومت نے مکمل تیاری کر لی ہے ۔انھو ں نے کہا کہ قیمتو ں میں مصنوعی اضافہ کر نے والو ں کے خلا فروزانہ کی بنیاد پر کاروائی کاسلسلہ جاری ہے ۔انھوں نے کہا کہ گراں فروشی کر نے والو ں کو نہ تو صرف جرمانے کیے جائیں گے بلکہ ان کے خلافمقدمات بھی درج کروائے جائیں گے ۔رمضان سے قبل ہی اس وقت مارکیٹو ں اور بازاروں میں گھی فی کلو 170روپے ،چینی 60روپے ، بو تل شر بت 175روپے ،دال چنا 70روپے ، سفید چنے 90روپے ،بیسن 80روپے ،ٹماٹر 60 روپے، پیاز 70روپے، سبز توری 40روپے، ٹینڈا 40 روپے، بھنڈی60 روپے، کدو36 روپے، کریلا35 روپے، بینگن 35 روپے، کھیرا40روپے، مٹر80روپے، سبز مرچ 50روپے، شملہ مرچ80روپے، لیموں180روپے جبکہ مرغی شیور196 روپے فی کلو گرام پر پہنچ گئی ہے جبکہ پھلوں میں سیب200روپے، آم 120 روپے ، خربوزہ 60روپے، تربوز30روپے، خوبانی100،آلو بخار ا150 روپے فی کلو گرام اور کھیلا160روپے فی درجن پر فروخت ہونے لگا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -