رمضان المبارک میں 12 بجے دوپہر سے تین بجے تک کارکنوں سے دھوپ میں کام نہیں لیا جاسکتا :سعودی وزارت محنت

رمضان المبارک میں 12 بجے دوپہر سے تین بجے تک کارکنوں سے دھوپ میں کام نہیں لیا ...
رمضان المبارک میں 12 بجے دوپہر سے تین بجے تک کارکنوں سے دھوپ میں کام نہیں لیا جاسکتا :سعودی وزارت محنت

  

جدہ (محمد اکرم اسد / بیورو چیف) سعودی وزارت محنت کے ترجمان تیسیر المفرج نے کہا ہے کہ موسم گرما کے دوران 12 بجے دوپہر سے تین بجے تک کارکنوں سے دھوپ میں کام نہیں لیا جاسکتا تاہم اس سے شہری ہوابازی کا عملہ مستثنیٰ ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہری ہوا بازی کا عملہ طیاروں اور فضائی مسافروں کو مختلف قسم کی خدمات مہیا کرتا ہے اور اس کا کام 24 گھنٹے جاری رہتا ہے کام کی نوعیت ہنگامی ہے طیاروں کی آمدورفت کے سلسلے کو کسی طور نہیں روکا جاسکتا یہی وجہ ہے کہ محکمہ شہری ہوا بازی کا عملہ رات دن اپنے فرائض انجام دینے کا پابند ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزارت محنت کے قوانین کے تحت تمام کمپنیاں 15 جون سے 15 ستمبر تک مذکورہ اوقات میں اپنے کارکنوں سے دھوپ میں کام نہیں لے سکتیں تاہم ہم کمپنیوں کے مالکان سے امید رکھتے ہیں کہ وہ 15 جون تک کا انتظار نہ کریں اور گرم موسم دیکھتے ہوئے فوری طور پر اپنے کارکنوں کو دھوپ میں کام کرنے سے روک دیں۔

وزارت محنت کے قوانین کے مطابق خلاف ورزی پر 3 ہزار سے 10 ہزار ریال تک کا جرمانہ کیا جاسکتا ہے، خلاف ورزی کرنے والی کمپنی یا ادارے کے حالات کے پیش نظر 30 دن تک بند کیا جاسکتا ہے۔ یہی نہیں بلکہ خلاف ورزی کی تکرار پر کمپنی کو مستقل طور پر بند کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وزارت نے خلاف ورزیوں کے اندراج کے لئے ٹول فری نمبر 19911 مختص کیا ہے جس پر شہری اور غیر ملکی فوری رابطہ کرکے شکایت درج کراسکتے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -