جنت نظیر کشمیر عالمی ضمیر کی بیداری کا منتظر ہے،سلمان پرویز

جنت نظیر کشمیر عالمی ضمیر کی بیداری کا منتظر ہے،سلمان پرویز

  

لاہور(پ ر)انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی سینئر نائب صدر سلمان پرویز نے کہا ہے کہ جنت نظیر کشمیرعالمی ضمیر کی بیداری کامنتظر ہے، مقتدرقوتوں کومجرمانہ خاموشی ترک کرناہوگی۔جنت نظیروادی کی بربادی کے دلخراش مناظر دیکھتے ہوئے ہرایک باضمیرانسان کی روح تک کانپ جاتی ہے۔ضمیر کے قیدی کشمیریوں سمیت بھارتی مسلمانوں کوانتہائی بربریت اورنفرت کاسامنا ہے۔

بھارتی مسلمان دوہرے خطرات سے دوچار ہیں،ایک طرف کروناوبا کاڈرجبکہ دوسری طرف منتقم مزاج انتہاپسندہندو ان کی جان کے درپے ہیں۔انتہاپسندہندوؤں کے بدترین تعصب سے بھارتی مسلمانوں کے اعصاب شل ہورہے ہیں،اقوام متحدہ فوری مداخلت کرے۔اپنے ایک بیان میں سلمان پرویز نے مزید کہا کہ ماہ رمضان میں مسلمانوں پران کے معبودبرحق کی رحمت برستی ہے لیکن کشمیریوں پربھارتی فوجی شب وروز بارود اور گولیاں برسا رہے ہیں۔بھارت دانستہ ایل اوسی پرسیزفائر معاہدہ کی مسلسل خلاف ورزیاں کررہا ہے،اس سے بازپرس کی جائے کیونکہ کروناوبا سے نبردآزمادنیادوایٹمی ملکوں کے درمیان تصادم کی متحمل نہیں ہوسکتی۔انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان میں بھی بھارتی مسلمان ہر فرض عبادت اور ضروریات زندگی کیلئے تجارت سے بھی محروم رہے۔ کرونا وبا کو مسلمانوں سے منسوب کرنا اورانہیں معاشی سرگرمیوں سے روکنا عالمی ضمیر پرکاری ضرب لگانے والی بات ہے۔انہوں نے کہا کہ انتہاپسندہندونہتے مسلمانوں اورکشمیریوں کو بہیمانہ تشددکانشانہ بنارہے ہیں جبکہ عالمی ضمیر خاموش ہے۔بھارت کے پسماندہ اورمفلسی کے نتیجہ میں ناخواندہ مسلمانوں کی زندگی کوانتہاپسندہندوؤں کی درندگی سے خطرہ ہے،مقتدرقوتوں کی مجرمانہ خاموشی ان کے شایان شان نہیں لہٰذاء انہیں دنیا کے ہرمظلوم کو انصاف کی فراہمی کیلئے آوازاٹھاناہوگی۔انہوں نے کہا کہ انسانیت تعصبات کابوجھ نہیں اٹھاسکتی لہٰذاء اقوام متحدہ کشمیری،فلسطینی اوربھارتی مسلمانوں کے بنیادی حقوق کی بازیابی یقینی بنائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -