کورونا کے باعث 2ماہ سے بند ماتحت عدالتیں کھل گئیں، ایس او پیز پر مکمل عملدرآمد نہ ہوسکا

کورونا کے باعث 2ماہ سے بند ماتحت عدالتیں کھل گئیں، ایس او پیز پر مکمل ...

  

لاہور(نامہ نگار)کورونا وائرس کے دوران سائلین کو بروقت انصاف کی فراہمی کے لئے 2ماہ بعد ماتحت عدالتیں کھل گئیں،جس سے عدالتوں میں ویران کمروں کی رونقیں دوبارہ بحال ہوگئی ہیں،وکلا اورسائلین نے بھی اس پرخوشی کااظہار کیاہے،گزشتہ روزعدالتیں کھلنے کے پہلے روز رش معمول سے کم رہا جبکہ ایس او پیز پر بھی مکمل طور پر عمل درامد نہ ہوسکا،کرونا وبا کے پیش نظر مارچ کے آخر میں ماتحت عدالتوں میں ریگولر مقدمات کی سماعت روک دی گئی تھی جبکہ صرف اہم نوعیت کے مقدمات کی سماعت کی جارہی تھی،اب چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کے حکم پر معمول کے مقدمات کی سماعت دوبارہ شروع ہوئی گئی ہیں، عدالتوں میں دوبارہ کام شروع ہونے پر وکلا بھی خوش کا اظہار کر رہے ہیں جبکہ سائلین نے بھی خوشی کااظہار کیاہے،گزشتہ روز عدالتیں کھلنے کے حوالے سے وکلا ء میاں داؤد، مدثر چودھری،مرزاحسیب اسامہ اور مجتبیٰ چودھری کا کہنا ہے کہ کرونا سے بچنے کے لئے احتیاط ہی واحد راستہ ہے جس سے ہم اپنی اور دوسروں کی جان بچاسکتے ہیں،یادرہے کہ لاہور ہائیکورٹ نے پابند کررکھاہے کہ تمام عدالتوں کو مکمل طور پر سینی ٹائز کیا جائے گا۔

،جج، وکلا اور عدالتی عملہ ماسک پہننے کو یقینی بنائیں گے۔

مزید :

علاقائی -