ملک بھر میں ایک ماہ کا سخت لاک ڈاؤن کیا جائے: وائے سی اے کا مطالبہ

    ملک بھر میں ایک ماہ کا سخت لاک ڈاؤن کیا جائے: وائے سی اے کا مطالبہ

  

اسلام آباد (این این آئی)ینگ کنسلٹنٹ ایسوسی ایشن پاکستان نے کورونا وبا میں شدت اور اموات کا ذمہ دار حکومت کو قرار دیتے ہوئے حکومت کو مذاکرات کے لئے سات روز کا وقت دے دیا۔ مطالبات نہ مانے گئے تو آٹھ جون سے ملک بھر کی اوپی ڈیز سروسز معطل کر دیں گے۔چیئرمین وائے سی اے ڈاکٹر اسفند یار کے مطابق سات روز کے اندر ہمیں بتایا جائے حکومت کے پاس بغیر حفاظتی تدابیر اورسکریننگ کے کورونا پر کنٹرول کرنے کا کیا نسخہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ کورونا سے جاں بحق ہیلتھ کئیر ورکرز کے بچوں کو یتیم کرنے کی ذمہ دار بھی حکومت ہے، وائے سی اے نے مطالبہ کیا کہ کورونا وائرس پر قابو پانے کے لئے ایک ماہ کا سخت لاک ڈاؤن کیا جائے۔ ڈاکٹر اسفند یار نے کہاکہ سکریننگ کے بغیر اوپی ڈیز خطرے سے خالی نہیں ہیں۔ مطالبہ کیا کہ ملک بھر کی او پی ڈیز بند کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری کیا جائے۔ مطالبہ کیا کہ جن کو ایمرجنسی علاج کی ضرورت نہیں ان کے لئے ٹیلی میڈیسن شعبہ کو فعال کیا جائے۔ ڈاکٹر اسفند یار نے کہاکہ حکومتی ناقص پالیسز کی وجہ سے ہیلتھ کیئر ورکرز کورونا سے متاثر ہو رہے ہیں، ایمرجنسی میں کام کرنے والے ڈاکٹرز، نرسنگ اور پیرامیڈک سٹاف کو پی پی ایز کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔

وائے سی اے

مزید :

صفحہ اول -