شیخوپورہ،چکن مافیا نے خود ساختہ ریٹ بڑھا دیئے، 400روپے تک فروخت ہونے لگا

شیخوپورہ،چکن مافیا نے خود ساختہ ریٹ بڑھا دیئے، 400روپے تک فروخت ہونے لگا

  

شیخوپورہ(بیورورپورٹ)کرونا کے ستائے عوام پر چکن فروش مافیا نے شیخوپورہ کے شہریوں پر ایک اور خود ساختہ وباء کا بم گرا دیا،مرغی مارکیٹوں میں چکن نایاب ہو گیا،زندہ برائلر مرغی فی کلو 220سے 230روپے فی کلو جبکہ مرغی کا گوشت 350سے400روپے تک فروخت کیا جا رہا ہے،برائلر مرغی کے گوشت کا فی کلو سرکاری ریٹ 260روپے مقرر کیا گیا ہے، مرغی مارکیٹ جناح پارک اور مرغی مارکیٹ صدر چوک میں چکن فروخت کرنے والے دوکانداروں نے گٹھ جوڑ کر کے غیر قانونی طور خود ساختہ ریٹ طے کر لیئے ہیں،جس کی وجہ سے چکن کا گوشت بھی غریب آدمی کی دسترس سے دور ہو گیا ہے،ضلعی انتظامیہ کی طرف سے شہر کے وسط میں واقع جناح پارک مرغی مارکیٹ تک تو کاروائیاں کرنے کی اطلاعات موصول ہو ئیں ہیں مگر مرغی مارکیٹ صدر چوک چونکہ رہائشی علاقہ میں واقعہ ہے اس لیئے وہاں پر ضلعی انتظامیہ کا کوئی بھی آفیسر جا نے کی زحمت گوارا نہیں کر رہا جس کی وجہ سے یہاں کے دوکاندار دھڑلے کے ساتھ گراں فروشی کر رہیں ہیں، اس سلسلہ میں چکن فروش مافیاکا کہنا ہے کہ انتظامیہ ہمیں چکن کا گوشت فی کلو 260روپے کا فروخت کرنے کا تو کہتے ہیں مگر بڑے مگر مچھوں کو ہاتھ نہیں ڈالتے، ہمیں کنٹرول شیڈ والے بڑے کاروباری سرمایہ دار برائلر زندہ مرغی فی کلو 200روپے دیتے ہیں اور اس طرح ہمیں مرغی کا گوشت فی کلو 300روپے سے اوپر گھر میں پڑتا ہے تو ہم لوگوں کو 260روپے کلو گوشت کیسے فروخت کر سکتے ہیں،ہمارے بھی چھوٹے چھوٹے بچے ہیں ہم اپنے پاس سے پیسے ڈال کر حکومت کی پالیسیوں پر عملدرآمد نہیں کر سکتے، انتظامیہ کو چاہیے کہ اپنے مقرر کردہ نرخوں پر عملدرآمد کروانے کے لیئے ہمارا پیچھا چھوڑ کر کنٹرول شیڈ مالکان کے خلاف گھیرا تنگ کریں۔

چکن مہنگا

مزید :

صفحہ آخر -