سکھر، بلدیہ اعلیٰ کے ملازمین کا مئیر کے بنگلے پر تعیناتی کا انکشاف

  سکھر، بلدیہ اعلیٰ کے ملازمین کا مئیر کے بنگلے پر تعیناتی کا انکشاف

  

سکھر(بیورورپورٹ)بلدیہ اعلیٰ سکھر کے سیکڑوں ملازمین کا مئیر سکھر کے بنگلے پر تعیناتی کا انکشاف،دفاتروں میں حاضری کم،مئیر سکھر سمیت سکھر ہاؤس کے چہتے کی جی حضوری میں مصروف گھر بیٹھے تنخواہ وصول کرنے لگ گئے، شہری حلقوں میں تشویش کی لہر دوڈ گئی، وزیر اعلیٰ سندھ و صوبائی وزیر بلدیات سے نوٹس لینے کا مطالبہ، تفصیلات کے مطابق سکھر میونسپل کارپوریشن کے مختلف محکموں لینڈ گرانڈ، اینٹی انکروچمنٹ فورس، ٹیکسیشن برانچ، فائر اسٹیشن، سینٹری اسٹاف، واٹر ورکس، ڈرینج، ڈسپوزل یونٹ سمیت دیگر ڈپارٹمنٹ کے سیکڑوں ملازمین مئیر سکھر ارسلان شیخ کے بنگلے (سکھر ہاؤس) پر ڈیوٹی سر انجام دینے کا انکشاف ہوا ہے سکھر میونسپل کارپوریشن کے مختلف ڈپارٹمنٹ سے تعلق رکھنے والے سیکڑوں ملازمینجن میں ماشکی، چوکیدار و دیگر شامل ہیں یا تو وہ سکھر ہاؤس میں آنے والے مہمانوں کی خاطری میں مصروف دیکھائی دیتے ہیں اور کچھ ملازمین مئیر سکھر کی سکھر آمد کے دوران انکے آگے پیچھے دنداتے ہوئے نظر آتے ہیں، سکھر میونسپل کارپوریشن کے ڈپارٹمنٹ شعبہ تعلقات عامہ کے ایک فوٹو گرافر بھرتی کے باوجود بلدیہ اعلیٰ سکھر کے گریڈ پانچ اور 7میں بھرتی ہونے والے ملازمین بھی اپنے ڈپارٹمنٹ میں ڈیوٹیاں سر انجام دینے کے باوجود مئیر سکھر ارسلان شیخ کے سکھر دورے کے موقع پر نوکری بچانے کیلئے ذاتی کیمرے لیکردن رات فوٹو گرافری سمیت سکھر ہاؤس کے چہتوں کی خوشامد کرنے میں مصروف دیکھائی دیتے ہیں، اسی طرح سکھر کی 26میونسپل کمیٹیوں میں بھی تعینات سینٹری اسٹاف چیئرمین اوروائس چیئرمین کے گھروں پر صفائی سمیت دیگر کاموں پر مامور ہیں شہری حلقوں کی جانب سے بلدیہ اعلیٰ سکھر کے سیکڑوں ملازمین کا مئیر سکھر، یوسی چیئرمین و وائس چیئرمین کے بنگلوں پر تعیناتی کے انکشاف پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ سندھ، صوبائی وزیر بلدیات و دیگر بالا حکام سے نوٹس لیکر ملازمین کے خلاف محکمہ جاتی کاروائی کا پرزور مطالبہ کیا گیا ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -