ایس بی سی اے نے شہر کو غیر قانونی عمارتوں کا جنگل بنادیا ہے،محمد اشرف

      ایس بی سی اے نے شہر کو غیر قانونی عمارتوں کا جنگل بنادیا ہے،محمد اشرف

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان مسلم لیگ (فنکشنل) پی ایس 110کے سینئر نائب صدر محمد اشرف خان نے کہا ہے کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی نااہلی کی وجہ سے شہر قائد غیر قانونی بلڈنگوں کا جنگل بن گیا ہے۔پی آئی اے طیارہ حادثے میں تباہ ہونے والی عمارتیں بھی ایس بی سی اے کے کرپٹ افسران کی وجہ سے غیر قانونی طور پر تعمیر کی گئی تھیں۔سپریم کورٹ آف پاکستان سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ ایس بی سی اے کے معاملات پر از خود نوٹس لے۔اپنے ایک بیان میں محمد اشرف خان نے کہا کہ کراچی کا شمار ماضی میں دنیا کے جدید ترین شہروں میں ہوتا تھا اور ہر چیز کا انفرااسٹرکچر موجود تھا لیکن سرکاری اداروں کی اناہلی اور رشوت ستانی کی وجہ سے آج شہر قائد کوئی لاوارث علاقہ نظر آتا ہے۔انہوں نے کہا کہ شہر میں غیر قانونی تعمیرات کے حوالے سے ایس بی سی اے کے کردار مجرمانہ ہے۔بھاری رقوم کے عوض شہر میں کثیر المنزلہ عمارتیں بنانے کی اجازت دے دی گئی ہے،جس کی وجہ سے آئے روز عمارتوں کے گرنے کے واقعات رونما ہورہے ہیں،جس میں بے گناہ افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایئرپورٹ کے حساس علاقے میں کثیر المنزلہ عمارتیں بنانے کی اجازت دے دی گئی اور طیارہ حادثے میں عمارتیں گرنے سے لوگوں کے ہلاک ہونے کی ذمہ دار بھی ایس بی سی اے ہے۔انہوں نے سپریم کورٹ آف پاکستان سے اپیل کی کہ وہ ایس بی سی اے کے معاملات پر از خود نوٹس لے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -