رحیم یارخان:11سالہ بچہ بد فعلی کے بعد قتل، ملزموں کی تلاش شروع

  رحیم یارخان:11سالہ بچہ بد فعلی کے بعد قتل، ملزموں کی تلاش شروع

  

رحیم یارخان(بیورورپورٹ)اوباشوں نے گیارہ سالہ بچے کو بدفعلی کا نشانہ بنا کر گناہ چھپانے کی خاطر نہر میں غوطے دیتے ہوئے رسی کے پھندے کے ذریعے گلا دبا کرموت کے گھاٹ اتاردیااور مقتول کو سائیکل سمیت نہر میں پھینک کر فرار ہو گئے۔ تفصیل کے مطابق(بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

تھانہ سٹی سی ڈویژن کی حدود نوریوالی کی رہائشی شمیم بی بی نے پولیس کو اپنی تحریری شکایت میں بیان کیا کہ اس کا گیارہ سالہ بیٹا محمدعزیز سائیکل پر سوار ہوکرنوریوالی پل نہرپر گیا ہوا تھا کہ اسی دوران چار اوباش ملزمان منگلا وغیرہ نے اسے ورغلا کر نہانے کے بہانے نہر میں لے گئے اور چاروں ملزما ن نے اسے بدفعلی کا نشانہ بنا ڈالا، شور و واویلا کرنے پر ملزمان نے گناہ چھپانے کی خاطر اس کے بیٹے محمدعزیز کو نہر میں غوطے دینا شروع کر دئیے اور بعدازاں رسی کے ذریعے گلا دبا کر اس کو موت کے گھاٹ اتار دیا، مقتول محمدعزیز کی نعش اور سائیکل پھینک کر فرار ہو گئے، اہل علاقہ کی اطلاع پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر مقتول محمدعزیز کی نعش اور سائیکل تحویل میں لے لی اور لاش پوسٹمارٹم کے لئے ہسپتال منتقل کر دی۔ والدہ شمیم بی بی کی رپورٹ پر پولیس نے چاروں ملزمان کے خلاف مقدمہ نمبری 320/20بجرم 302/34 درج کر کے کارروائی شروع کر دی ہے۔

تلاش

مزید :

ملتان صفحہ آخر -