سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداران کی نامزدگیوں کاتنازع،عدالتی معاملات میں مداخلت پر وکیل کو ایک لاکھ روپے جرمانہ

سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداران کی نامزدگیوں کاتنازع،عدالتی ...
سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداران کی نامزدگیوں کاتنازع،عدالتی معاملات میں مداخلت پر وکیل کو ایک لاکھ روپے جرمانہ

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداران کی نامزدگیوں کے تنازع میںمداخلت پر وکیل عامر رانا کو ایک لاکھ روپے جرمانہ کردیا،عدالت نے فیڈریشن آف چیمبر اینڈکامراس کو معاملے کے حل کیلئے 5 روز کاوقت دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداران کی نامزدگیوں کے تنازع پر سماعت ہوئی،جسٹس عمر عطابندیال کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی ،بین الاقوامی سطح پر نمائندگی کو متنازع کرنے پر جسٹس عمر عطابندیال شدید برہم ہو گئے،جسٹس عمر عطابندیال نے کہاکہ کورونا نے آپ کے جھگڑے کو چھپا لیا ہے،دو رکنی کمیٹی قائم کررہے ہیں۔

وکیل عامر رانا نے کہاکہ آپ دو کے بجائے 3 نام ڈال دیں ،جسٹس عمر عطابندیال نے کہاکہ عدالت کے معاملات میں مداخلت مت کریں ،وکیل عامر رانا نے عدالت سے معافی مانگ لی ،جسٹس عمر عطابندیال نے کہاکہ ابھی ایک لاکھ روپے جرمانہ ادا کرکے رسید سپریم کورٹ میں جمع کرائیں ،وکیل عامر رانا نے کہاکہ کورونا ریلیف فنڈ میں پیسے جمع کرا دیتے ہیں ۔عدالت نے فیڈریشن آف چیمبر اینڈکامراس کو معاملے کے حل کیلئے 5 روز کاوقت دیدیا۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -پنجاب -لاہور -