کورونا وائرس کی ویکسین کی خوشخبری سنانے والی کمپنی نے اپنے شیئرز کی قیمتیں بڑھانے کے لیے جھوٹ بولا ؟ نیا تنازعہ پیدا ہوگیا

کورونا وائرس کی ویکسین کی خوشخبری سنانے والی کمپنی نے اپنے شیئرز کی قیمتیں ...
کورونا وائرس کی ویکسین کی خوشخبری سنانے والی کمپنی نے اپنے شیئرز کی قیمتیں بڑھانے کے لیے جھوٹ بولا ؟ نیا تنازعہ پیدا ہوگیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی کمپنی ’ماڈرنا‘ نے دو ماہ قبل کورونا وائرس کی ویکسین بنانے کا اعلان کیا تھا اور مئی میں اس ویکسین کے ٹرائیلز کے پہلے مرحلے کے نتائج دنیا کے سامنے رکھے تھے جس کے بعد اس کمپنی کے حصص کی قیمت میں کئی گنا اضافہ ہو گیا اور کمپنی کو کروڑوں ڈالر کا فائدہ پہنچا۔ اب معاشی اور طبی ماہرین کمپنی کو شک کی نگاہ سے دیکھ رہے ہیں جن کا کہنا ہے کہ ممکنہ طو رپر کمپنی نے ویکسین کے متعلق جھوٹا دعویٰ کیا تاکہ اس کے حصص کی قیمت بڑھے اور کمپنی کو مالی فائدہ ہو۔بتایا گیا ہے کہ حصص کی قیمت بڑھنے کے بعد کمپنی کے 3کروڑ ڈالر کے حصص فروخت کیے گئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ماہرین کے اس شک کے باوجود کمپنی نے اپنی ویکسین کے ٹرائیلز کا دوسرا مرحلہ شروع کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ کمپنی کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ دوسرے مرحلے میں پہلے کورونا وائرس کے مریض کو ویکسین دے دی گئی ہے۔ اس مرحلے میں 600مریضوں پر ٹرائیلز کیے جائیں گے۔ یہ مریض عمر کے لحاظ سے دو گروپوں میں تقسیم کیے جائیں گے۔ پہلا گروپ 55سال سے کم عمر مریضوں پر مشتمل ہو گا اور دوسرا اس سے زائد عمر کے مریضوں پر۔ پہلے مرحلے کے نتائج میں کمپنی کی طرف سے بتایا گیا کہ ان کی ویکسین کورونا وائرس پر بہت مو¿ثر اور محفوظ ثابت ہوئی ہے اور کمپنی کے ماہرین کی طرف سے امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ دوسرے مرحلے میں بھی حوصلہ افزاءنتائج سامنے آئیں گے۔

مزید :

بین الاقوامی -