”دنیا کی جدید کرکٹ اور پاکستان کی کرکٹ میں بہت فرق ہے“ ہائی پرفارمنس سینٹر کے ڈائریکٹر ندیم خان نے تشویشناک بات کہہ دی

”دنیا کی جدید کرکٹ اور پاکستان کی کرکٹ میں بہت فرق ہے“ ہائی پرفارمنس سینٹر ...
”دنیا کی جدید کرکٹ اور پاکستان کی کرکٹ میں بہت فرق ہے“ ہائی پرفارمنس سینٹر کے ڈائریکٹر ندیم خان نے تشویشناک بات کہہ دی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے ہائی پرفارمنس سینٹر کے ڈائریکٹر ندیم خان نے کہا ہے کہ دنیا کی جدید کرکٹ اور پاکستان کی کرکٹ میں بہت فرق ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی سی بی کے ہائی پرفارمنس سینٹر کے ڈائریکٹر ندیم خان کا کہنا ہے کہ پاکستان کرکٹ جدید دور کی کرکٹ سے بہت پیچھے رہ گئی ہے اور اس فرق کو دور کرنے کیلئے ہائی پرفارمنس سینٹر بنایا گیا ہے جس کے باعث آئندہ 6 ماہ میں اچھے نتائج ملنے لگیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ایسا نہیں ہے کہ ماضی میں کام نہیں ہوا جو لوگ اکیڈمی کے ساتھ وابستہ رہے انہوں نے اچھا کام کیا اور پاکستان سے اچھے کھلاڑی سامنے آئے لیکن سب نے یہ نوٹ کیا کہ ماڈرن ڈے کرکٹ اور پاکستان کرکٹ میں بہت فرق ہے ہم بہت پیچھے رہ گئے ہیں۔

ندیم خان کا کہنا تھا کہ ٹیسٹ کرکٹ کو دیکھ لیں سب یہی کہیں گے کہ ہم میں اور دنیا میں بہت فرق ہے اسی فرق کو کم کرنے کیلئے ہائی پرفارمنس سینٹر بنایا گیا ہے، ہم نے جلد از جلد اس فرق کو کم ہی نہیں ختم کرنا ہے اور اوپر جانا ہے۔پہلے بھی کوچز تھے لیکن اب کوشش کی گئی ہے کہ ہر فیلڈ کیلئے ایک ماہر شخص کو مختص کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ہیڈ آف انٹرنیشنل پلیئر ڈویلپمنٹ ثقلین مشتاق مقامی کوچز کے ساتھ مل کر کھلاڑیوں کی شناخت کریں گے اور انہیں نکھاریں گے۔ثقلین مشتاق جونیئر اور سینئر ٹیموں کے کوچز کے ساتھ مل کر کام کریں گے، یہ ایک مشکل کام ہے لیکن ثقلین یہ کام کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

مزید :

کھیل -