قاتل ڈور سے جاں بحق طالبعلم مبین کاشف کے گھرلوگوں کا تانتا بند ھار ہا، والدین کو غشی کے دورے 

قاتل ڈور سے جاں بحق طالبعلم مبین کاشف کے گھرلوگوں کا تانتا بند ھار ہا، والدین ...

  

لاہور (رپورٹ:  یونس باٹھ)تین روز قبل گلے پر ڈور پھرنے سے جاں بحق ہونیوالے طالبعلم مبین کاشف کے گھر گزشتہ روز بھی افسوس کیلئے آنیوالے لوگوں کا رش رہا،وزیر اعلی حمزہ شہباز بھی متاثرہ خاندان کے گھر گئے،غم سے نڈھال خاندان نے وزیر اعلی کومقامی پولیس کیخلاف شکایات کے انبار لگا دئیے اور کہا کہ متوفی اس کے بڑھاپے کا سہارا تھا اس کے جانے سے اس کی کمر ٹوٹ گئی ہے جبکہ اس کی والدہ کو غشی کے دورے پڑ رہے ہیں ڈور سے ہلاکت کا شہر میں یہ پہلا واقعہ نہیں رواں سال کے دوران شہر میں پیش آنے والا یہ پانچواں واقعہ ہے۔مبین کاشف کے غمزدہ والد کاشف نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ سکریب کاکاروبار کرتا ہے کرائے کے گھر میں مقیم ہے اس کی گزر اوقات بڑی مشکل سے ہوتی ہے بیٹا اس کے بڑھاپے کا سہارا تھا قاتل ڈور نے ان کا جوان بیٹا چھین لیا ہے جس کی ذمہ دار پولیس اور ضلعی انتظامیہ ہے، خونی کھیل کو روکنے کیلئے عملی اقدامات کیے جائیں تاکہ آئندہ کوئی قیمتی جان ضائع نہ ہو۔متوفی کی والدہ  ثوبیہ نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہو ئے غم سے نڈھال ہوکربیہوش ہوگئی،متوفی کی بہن ایمن اور بھائی مبشر نے روزنامہ پاکستان  سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا لاڈلہ بھائی ان سے بہت پیار کرتا تھا اور اس نے ابھی چار روز قبل ہی کہا تھا کہ اس کی عمر 18سال ہو گئی ہے وہ اپنا شناختی کارڈ بنوا کر بیرون ملک چلا جائے گا وہاں کام بھی کرے گا اور ساتھ پڑھائی بھی مکمل کرگا لیکن انہیں معلوم نہیں تھا کہ وہ تو سب کو روتا ہوا چھوڑ کر اس دنیا سے چلا جائے گا۔

مبین کاشف 

مزید :

صفحہ آخر -