کینسر مریضوں کو ادویات کیلئے فنڈز دینے کا سلسلہ شروع

کینسر مریضوں کو ادویات کیلئے فنڈز دینے کا سلسلہ شروع

  

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کی ہدایت پر محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر نے کینسرکے مریضوں کو دوماہ کی Glivec میڈیسن کی خریداری کے لئے 19000 روپے دینے کا عمل شروع کر دیا ہے۔ اس طرح 2436 رجسٹرڈ کینسر کے مریضوں پر 4 کروڑ، 62 لاکھ 84 ہزار روپے خرچ آئیگااس امر کا اظہار سیکرٹری صحت علی جان خان نے ایک اجلاس کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ صحت کینسر کے مریضوں کو علاج کے لئے چار مختلف ادویات نوارٹس فارما پاکستان کی مدد سے دو معاہدوں کے تحت مفت فراہم کر رہا تھا۔ علی جان خان کا کہنا ہے کہ چند ناگزیر وجوہات کی بناء  پر دونوں معاہدوں  میں سے ایک معاہدہ کی تجدید نہ ہوسکی جسکی وجہ سے کینسر کی ایک اہم دوا Glivec کی فراہمی میں تعطل پیدا ہوگیا اور غریب اور متوسط طبقے کے مریضوں کو Glivec کی فراہمی برقرار نہ رکھی جاسکی تاہم میو ہسپتال لاہور نے محکمہ صحت کی ہدایت پر اور مروجہ قوانین کے تحت اس دوا کی خریداری کا عمل شروع کر دیا ہے لیکن اس کی تکمیل میں دو ماہ کا عرصہ درکار ہے لہذا ہر مریض کو دوماہ کی دوا کے لئے 19000 روپے دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

سیکرٹری صحت نے کہا کہ وزیراعلی پنجاب نے حالات کا جائزہ لینے کے بعد غریب مریضوں کی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے اس دوماہ کے تعطل میں دوا کی متواتر فراہمی برقرار رکھنے کے لیے CML پراجیکٹ کے تحت رجسٹرڈ بلڈ کینسر کے ہر مریض کو دوماہ کی دوا کے لئے 19000 روپے دینے کی ہدایات جاری کردی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ رقم کینسر کے مریضوں کو بذریعہ بنک آف پنجاب تقسیم کی جائے گی۔مریضوں کو بذریعہ SMS اطلاع دی جائیگی۔ علی جان خان کا مزید کہنا ہے کہ اگلے ایک ہفتے میں باقی ماندہ ادویات کے معاہدے بھی مکمل ہوجائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب مریضوں کو بہترین علاج معالجہ کی سہولیات اور ادویات کی فراہمی کے لئے ہمہ وقت کوشاں اور پر عزم ہے۔

رہے  آج انہی کو گالیاں دے رہا ہے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -