گرمی،لوڈشیڈنگ ڈبل، امتحانی سنٹرز میں سہولیات زیرو

 گرمی،لوڈشیڈنگ ڈبل، امتحانی سنٹرز میں سہولیات زیرو

  

 تونسہ شریف،رحیم یارخان، روجھان (بیورو رپورٹ، نمائندہ پاکستان)(بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

مہنگی بجلی بھی نایاب، رحیم یارخان میں غیراعلانیہ لوڈشیدنگ کاسلسلہ جاری، شہری اوردیہی علاقوں میں بجلی کی آنکھ مچولی اورکم وولٹیج نے شہریوں کوذہنی مریض بنادیا، کاروباری طبقہ سمیت گھروں میں موجودخواتین بچے بلبلااٹھے، شدیدگرمی میں میپکوکی جانب سے جاری اعلانیہ وغیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کادورانیہ دوگناکردیاگیاآج کل سالانہ امتحان بھی ہورہے ہیں جس میں طلبا وطالبات شدیدگرمی میں امتحانات دینے پرمجبورہیں۔ تفصیل کے مطابق حکومت کی جانب سے بجلی کی قیمت میں 4روپے فی یونٹ اضافہ، لائن لاسزپورے کرنے کے لیے اضافی یونٹس ڈال کراووربلنگ کے باوجودمیپکوکی جانب سے شہری اوردیہی علاقوں میں بلاتفریق گھنٹوں، گھنٹوں لوڈشیڈنگ کاسلسلہ جاری ہے بجلی کی آنکھ مچولی سے بازاروں میں دکاندار،گھروں میں موجودخواتین وبچوں اورامتحانی سنٹرزوتعلیمی اداروں میں طلبا وطالبات کوشدیدمشکلات سے دوچارہیں شہریوں کاکہناہے کہ اتنی مہنگی بجلی خریدکرنے کے باوجودانہیں گھنٹوں غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ اورکم وولٹیج کاسامناہے میپکورحیم یارخان کی جانب سے اپریل اورمئی کے بلوں میں لاکھوں اضافی یونٹس صارفین کوڈالے گئے جس کی درستگی کے لیے صارفین بل اوردرخواست لکھ کرمیپکوآفس کے چکرلگانے پرمجبورہیں تودوسری طرف بل درست کرنے کے اختیارات رکھنے والے افسران مبینہ طورپرفیلڈزاورمیٹنگزکابہانہ بناکردفاترسے غائب ہیں شہریوں کاکہناہے کہ مقررہ تاریخ پربل جمع نہ کروانے پرمیپکوکی جانب سے رکھے گئے میٹراتارلیے جاتے ہیں مہنگائی اوربے روزگاری کے اس دورمیں عام آدمی میپکوکے ظلم کاشکارہے موجودہ حکومت بھی صارفین کورعایت اورسہولت دینے میں ناکام نظرآرہی ہے حالیہ پٹرولیم مصنوعات میں 30روپے اضافہ کے بعد بجلی کی قیمت میں فی یونٹ 4روپے اضافہ موجودہ حکومت کاغریب عوام پرخودکش دھماکہ ہے شہریوں نے کہاکہ جب ہم اتنی مہنگی بجلی خریدکررہے ہیں اوراووربلنگ بھی اداکررہے ہیں توحکومت اورمیپکوہمیں بجلی توفراہم کرے کم وولٹیج اوربجلی آنکھ مچولی کے باعث صارفین کاگھریلوالیکٹرانکس اشیا جل رہی ہیں جس سے بھاری نقصان ہورہاہے شہریوں نے وزیراعظم میاں محمدشہبازشریف، وفاقی وزیرپانی وبجلی اورمیپکوحکام سے رحیم یارخان میں جاری غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ، کم وولٹیج اوراووربلنگ کانوٹس لیتے ہوئے ریلیف دینے کامطالبہ کیاہے۔ حکومت تبدیل ہوتے ہی واپڈہ ملازمین کے تیور بھی بدل گِے روجھان سٹی کی عوام کو سات گھنٹے جبکہ گردونواح کے علاقوں میں  اٹھارہ گھنٹوں کی بجلی کی  لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے بجلی کی  گھنٹوں بندش کے باعث عوام گرمی سے تڑپ رہی ہے جبکہ جماعت نہم کے طالب علموں کے امتحانات ہونے کے باعث کمرہ امتحان میں جماعت نہم کے طالب علم دوران امتحانات گرمی سے شدید پریشان ہیں واپڈہ نے   بجلی کی بندش کرکے بے گناہ شھریوں کو اذیت ناک زندگی میں مبتلا کیا ہوا جس کا کوئی پرسان حال نہیں  بجلی کی بندش کے باعث کاروبار زندگی ختم ہوچکا ہے جبکہ گھروں میں بچے خواتین اور بوڑھے گرمی سے تڑپ رہے ہیں کء شھریوں کے گرمی میں بے ہوش ہونے کی بھی خبریں آرہی ہیں روجھان کی عوامی وسماجی حلقے نعمت علی محمد نواز شاید حبیب قاسم خان سمیت سینکڑوں افراد نے وزیراعظم شہباز شریف سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا اور غیر اعلانیہ بجلی کی  لوڈ شیڈنگ کرنے اور عوام کو شدید گرمی۔میں۔اذیت دینے پر ذمہ دار واپڈہ ملازمین کو معطل کرنے کا مطالبہ کیا یے۔گرمی کا زور لوڈ شیڈنگ کا جن بے قابو کم وولٹیج سے برقی آلات جل کر راکھ کئی کئی گھنٹے بجلی غائب کاروباری سرگرمیاں ماند پڑ گئیں تونسہ سٹی فیڈر،شاہ سلیمان فیڈر،ناڑی  فیڈر،جپسم فیڈر، سوکڑ فیڈر پر بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ ایک بار پھر شروع ہوگیا ہے شدید سخت گرمی کے موسم میں تونسہ اور مضافات کی عوام لوڈ شیڈنگ سے ذہنی اذیت کا شکار ہوکر رہ گئی ہے بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے کاروباری طبقہ شدید پریشان دیکھائی دیتاہے بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے پانی کی سپلائی بھی تعطل کا شکار ہے جس کی وجہ سے شہر بھر میں پانی کے شدید بحران پیدا ہونے کا خدشہ ہونے لگا ہے اس کے علاوہ ان تمام فیڈروں پر بجلی کے کم وولٹیج سے لوگ اپنی قیمتی برقی اشیا جلنے کی وجہ سے شہریوں کا لاکھوں روپے کا نقصان ہورہا ہے کئی کئی گھنٹے کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے سخت گرمی سے پریشان نظر آتے ہیں شہریوں عابد حسین،میاں خالد آصف فاروقی،شہزاد بغلانی،عبدالجبار بزدار نے میپکو حکام سے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج کی کمی کو پورا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -