لیسکونے بروقت میٹریل فراہم نہ کرنے والی کمپنیوں کے حوالے سے بڑا فیصلہ کر لیا

لیسکونے بروقت میٹریل فراہم نہ کرنے والی کمپنیوں کے حوالے سے بڑا فیصلہ کر لیا
 لیسکونے بروقت میٹریل فراہم نہ کرنے والی کمپنیوں کے حوالے سے بڑا فیصلہ کر لیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(افضل افتخار سے)ملی بھگت کی باعث بروقت میٹریل فراہم نہ کرنے والی کمپنیوں کو بلیک لسٹ کیا جائے گا اور ان کیخلاف کارروائی کی جائے گی۔ لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی لیسکوکو میٹریل کی کمی کا سامنا تھا جس کو پورا کرنے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر مینوفیکچرز کے ساتھ مذاکرات کئے جارہے ہیں تاکہ لیسکو میں میٹریل کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے۔ ان خیالات کا اظہار چیئرمین بورڈ آف ڈائریکٹرز حافظ میاں محمد نعمان نے لیسکو چیف انجینئر شاہد حیدر کے ہمراہ ہیڈ کوارٹر میں پریس بریفنگ کے دوران کیا۔

چیئرمین لیسکو حافظ میاں محمد نعمان کا کہنا تھا کہ بورڈ کی تشکیلِ نو کے وقت دسمبر 2022 میں زیرو انوینٹری تھی اور میٹریل کی کمی کی وجہ سے نئے کنکشن کی تنصیب میں 8سے 10ماہ تاخیر کا سامنا تھا۔ بورڈ نے مٹیریل کی کمی کو پورا کرنے کے لئے بروقت فیصلے کئے اور اب نئے کنکشنز کی پینڈینسی ڈیڑھ سے دو ماہ رہ گئی ہے جبکہ ہمارا بینچ مارک ہے کہ بجلی کا نیا کنکشن 8سے 10دن کے اندر لگنا چاہیے جو کہ انشاءاللہ جلد ہی حاصل کرلیا جائے گا۔

چیئرمین نے میڈیا کو بتایا کہ2600 سے زائدنئے اور زخراب ٹرانسفارمر تبدیل کئے گئے ہیں جبکہ 5 لاکھ سے زائد میٹرز لگائے گئے ہیں۔ میٹرز سپلائی کرنے والی کمپنیوں کی طرف سے مشکلات آرہی ہیں کیونکہ میٹریل بنانے والی کمپنیوں نے بروقت سٹاک فراہم نہیں کیا۔  ہم اس حوالے سے تحقیقات کررہے ہیں کہ اگر کرپشن اور ملی بھگت سے میٹریل کا سٹاک تاخیر کا شکار ہوا تو ان کیخلاف ایکشن ہوگااور جو کمپنی جان بوجھ کر سپلائی میں تاخیر کررہی ہے دیگر ڈسکوز سے بھی انہیں بلیک لسٹ کروایا جائے گا۔ اس کے ساتھ ساتھ اگر محکمانہ غفلت کی وجہ سے میٹرز کی سپلائی التواءکا شکار ہے تو سخت کارروائی کی جائے گی۔ چیئرمین بی او ڈی نے بتایا کہ 450 انڈسٹریل کنکشن جو ڈیڑھ سال سے التواء کا شکار تھے ان میں سے 70 فیصد کنکشنز انسٹال کردیئے ہیں جبکہ 1 ماہ میں بقیہ 30 فیصد بھی انسٹال کر دئیے جائیں گے. لیسکو کی کھلی کچہریوں میں 6 ہزار شکایات موقع پر حل ہوئیں جبکہ عوام کی سہولت کو مدنظر رکھتے ہوئے ای کچہری بھی مہینے میں 3 مرتبہ منعقد کی جائے گی.