جنگ بندی اعلان کے بعد حکومتی و طالبان کمیٹیوں میں دو ہفتوں سے منقطع رابطے بحال

جنگ بندی اعلان کے بعد حکومتی و طالبان کمیٹیوں میں دو ہفتوں سے منقطع رابطے ...

اسلام آباد (آئی این پی) طالبان ترجمان کی طرف سے جنگ بندی کے اعلان کے بعد حکومتی اور طالبان کمیٹیوں کے درمیان تقریباً دو ہفتہ سے منقطع رابطے ایک بار پھر بحال ہوگئے ، اعلان کے فوری بعد وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے طالبان کی مذاکراتی کمیٹی کے چیئرمین جمعیت علمائے اسلام(ف)کے امیر مولانا سمیع الحق اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے کو آرڈینیٹر عرفان صدیقی کے ٹیلی فون پر ایک دوسرے سے رابطے ہوئے ہیں،جس کے دوران کالعدم تحریک طالبان کی جانب سے ایک ماہ کے لئے جنگ بندی کے اعلان پر بات چیت کی گئی۔ وزیر داخلہ اور وزیراعظم کے معاون خصوصی عرفان صدیقی نے فوری طور پر وزیراعظم کو اس اہم پیش رفت سے آگاہ کیا جس کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی اور وزیر داخلہ ( کل) پیر کو طالبان کے اعلان پر مشاورت کے لئے وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کریں گے ۔ ذرائع کے مطابق وزیر داخلہ کا مولانا سمیع الحق سے مدینہ منورہ میں ٹیلی فون پر رابطہ ہوا جس میں مولانا سمیع احق نے طالبان کی طرف سے جنگ بندی کے فیصلے سے وزیر داخلہ کو آگاہ کیا اور کہا کہ میرے ذمے جنگ بندی کا اعلان کروانا تھا وہ میں نے کرا دیا ہے۔ اب امن کی طرف مثبت انداز میں آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔ وزیر داخلہ نے امن کے لئے مولانا سمیع الحق کی خدمات کو سراہا اور کہا کہ طالبان کے اعلان پر حکومتی کمیٹی کا جلد اجلاس بلایا جائے گا۔ دریں اثناءعرفان صدیقی نے بھی چوہدری نثار سے فون پر رابطہ کیا اور طالبان کے اعلان کو خوش آئند قرار دیا اور پیر کو حکومتی کمیٹی کی وزیر اعظم سے ملاقات کرانے کا فیصلہ کیا گیا

 منقطع رابطے بحال

مزید : صفحہ اول