غلط پالیسیوں کے باعث آل کراچی تاجر اتحاد کا حقیقی وجود ختم ہوگیا،فہیم احمد نوری

غلط پالیسیوں کے باعث آل کراچی تاجر اتحاد کا حقیقی وجود ختم ہوگیا،فہیم احمد ...

کراچی (آن لائن)آل کراچی تاجر اتحاد کے مرکزی رہنما کی غلط پالیسیوں کے باعث اب کراچی میں آل کراچی تاجر اتحاد کا حقیقی وجود ختم ہوچکا ہے۔ےہ بات آل کراچی تاجر اتحاد کے بانی رکن اور صدر الائنس آف مارکیٹس کے سابق نائب صدر فہیم احمد نوری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی۔انہوں نے کہا کہ اس وقت تاجروں کو درپیش مسائل بالخصوص بھتہ خوری، اغوا برائے تاوان اور تاجروں کی ٹارگٹ کلنگ کے حوالے سے انہوں نے بحثیت وائس چیئرمین لاءاینڈ آرڈر کمیٹی کے متعدد بار اتحاد کے چیئرمین کو تحریری طور پر آگاہ کیا اور انہیں بتایا کہ تاجروں میں اس حوالے سے درپیش مشکلات کے ازالے کے لئے اتحاد کے پلیٹ فارم سے کوئی پیش رفت کی جائے لیکن افسوس کے اتحاد کے مرکزی رہنما کو صرف اپنے میڈیا ٹاک اور اپنی پبلسٹی کے علاوہ کسی سے کوئی دلچسپی نہیں رہی ہے اور یہی وجہ ہے کہ جامعہ کلاتھ، طارق روڈ، لانڈھی، کورنگی، ملیر، گلشن اقبال، لیاقت آباد سمیت متعدد مارکیٹوں نے آل کراچی تاجر اتحاد سے علیحدگی اختیار کرلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے آل کراچی تاجر اتحاد کی بنیاد ڈالی اور وہ اس کے بانی ممبران میں سے ایک تھے لیکن آج اتحاد میں کم و بیش تمام بانی ممبران نے علیحدگی اختیار کرلی ہے، جس کے بعد اب آل کراچی تاجر اتحاد کا کوئی حقیقی اور عملی وجود اس شہر میں باقی نہیں رہا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ آل کراچی تاجر اتحاد کی ٹوٹ پھوٹ کے ذمہ دار وہی لوگ ہیں جنہوں نے تاجروں کی بجائے اپنے آپ کو میڈیا میںروشناس کرانے پر زیادہ توجہ دی ۔

اور انہیں تاجروں کے مسائل سے اب کوئی دلچسپی نہیں رہی ہے۔ انہوں نے اعلان کیا کہ وہ جلد صدر اور دیگر مارکیٹوں کی تاجر تنظیموں اور الائنسوں کا ایک اجلاس طلب کرکے اپنے آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔ #

مزید : کامرس