حکومت کا شدت پسندوں کیخلاف فضائی کارروائی روکنے کا فیصلہ

حکومت کا شدت پسندوں کیخلاف فضائی کارروائی روکنے کا فیصلہ
حکومت کا شدت پسندوں کیخلاف فضائی کارروائی روکنے کا فیصلہ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) طالبان کی طرف سے جنگ بندی کے اعلان کے بعد حکومت اور عسکری قیادت نے بھی شدت پسندوں کے خلاف متاثرہ علاقوں میں فضائی ٹارگٹڈ کارروائیاں روکنے کا فیصلہ کرلیاہے جس کا باقاعدہ اعلان آج رات تک متوقع ہے تاہم جنگ بندی کے دوران حملے کی صورت میں جوابی کارروائی ہوگی ۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نواز شریف نے گذشتہ روز ہی طالبان کی طرف سے ایک مہینے کی جنگ بندی کے اعلان کے بعد آئندہ کا لائحہ عمل مرتب کرنے کی ہدایت کردی تھی جس پروزیراعظم ہاﺅس میں وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان اور آرمی چیف جنرل راحیل شریف کی ملاقات ہوئی جس کے بعد فاٹامیں فضائی کارروائیاں روکنے کا فیصلہ کیاگیا۔ ذرائع نے بتایاکہ یہ بھی فیصلہ ہواہے کہ ” ماریں گے تو ماریں گے ، بات چیت کریں گے تو بات چیت ہوگی ‘۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق طالبان کی طرف سے سیزفائرکااعلان ہوچکاہے جس کے بعد حکومت کی طرف سے بھی سیز فائر کرنے کافیصلہ کیاگیاہے تاہم معاملات کوآگے بڑھایاجاسکے تاہم کمیٹیوں کے مستقبل کے بارے میں تاحال کوئی فیصلہ نہیں ہوسکا، فریقین کی خواہش ہے کہ براہ راست مذاکرات کریں اور شاید مزید اعتماد کی بحالی کیلئے کمیٹیوں کی تاحال ضرورت رہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس