جگر کام کرنا چھوڑ گیا،شالامار کا نوجوان موت و حیات کی کشمکش میں مبتلاء

جگر کام کرنا چھوڑ گیا،شالامار کا نوجوان موت و حیات کی کشمکش میں مبتلاء

لاہور(فلم رپورٹر)شالامار باغ کے علاقہ کا رہائشی محنت کش عامر ان دنوں جگر کے عارضہ میں مبتلاء ہونے کے باعث موت و حیات کی کشمکش میں مبتلاء ہے ڈاکٹروں کے مطابق اس کا جگر سکڑ گیا ہے اور زندگی بچانے کے لئے فوری لیور ٹرانسپلانٹ ضروری ہے ۔عامر نے گزشتہ روز’’پاکستان‘‘سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ میں الیکٹریشن کا کام کرتا تھا لیکن جسمانی کمزوری اور بیماری کی وجہ سے مزدوری کرنے کے قابل نہیں رہا میں چھ سات سال سے مقامی ہسپتال میں اپنے ایک دوست کی وجہ سے مفت زیر علاج ہوں اب ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ تمہارا جگرسکڑنے کی وجہ سے تقریباً کام کرنا چھوڑ گیاہے اورتمہاری زندگی بچانے کیلئے لیور ٹرانسپلانٹ ضروری ہے اگر ایسا نہیں ہوا تو تمہارا بچنا ممکن نہیں ہے۔ لیور ٹرانسپلانٹ کی سہولت پاکستان میں نہیں ہے وہ صرف بھارت میں ہوتا آپریشن کے لئے 40سے 45لاکھ روپے کی ضرورت ہے ۔یہ اخراجات برداشت کرنا میرے جیسے محنت کش کے بس کی بات نہیں ۔بیماری کی وجہ سے جو جمع پونجی تھی وہ بھی خرچ ہوچکی ہے ۔اگرحکومت یا مخیر حضرات میری مدد کریں تو میری زندگی بچ سکتی ہے۔عامر نے مزید بتایا کہ میرے بھائی اور میرا بلڈ گروپ ایک ہی ہے اور اس کے جگر کا ٹکڑا لگنے کے بعد میں ٹھیک ہوسکتا ہوں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...