خانیوال15، میلسی 10، خانگڑھ 2، راجن پور 6، رحیمیارخان کا 39کروڑ سے زائد کا بجٹ منظور

خانیوال15، میلسی 10، خانگڑھ 2، راجن پور 6، رحیمیارخان کا 39کروڑ سے زائد کا بجٹ ...

خانیوال ‘ میلسی ‘ خانگڑھ ‘ راجن پور ‘ رحیم یار خان ( نمائندگان ) مختلف شہروں کی میونسپل کمیٹیوں کے اجلاس میں ششماہی بجٹ منظور کیےگئے ۔ اس سلسلے میں خانیوال سے بیورو نیوز ‘ نمائندہ پاکستان کے مطابق میونسپل کمیٹی خانیوال کا ششماہی بجٹ برائے رواں مالی سال2016-17 متفقہ طور پر منظور کر لیا گیا۔بجٹ کی منظور ی میونسپل کمیٹی کے پہلے بجٹ اجلاس میں دی گئی جس کی مدت یکم جنوری 2017 تا30جون 2017ہو گی۔بجٹ تقریر چیئر مین میونسپل کمیٹی خانیوال مسعود مجید خان ڈاہا نے پیش کی جبکہ بجٹ اجلاس کی صدارت وائس چیئر مین/کنوینر میونسپل کمیٹی رانا عبدالرحمن خاں نے کی۔منظور ہونے والے بجٹ میں آمدنیوں کا تخمینہ 15کروڑ 82لاکھ 49ہزار روپے اور اخراجات کا تخمینہ 15کروڑ71 ہزار روپے لگایا گیا ہے۔متوقع آمدنی میں گورنمنٹ گرانٹ(غیر ترقیاتی و ٹرانزیشن)کی مد سے 7کروڑ45لاکھ95ہزار روپے ،گورنمنٹ گرانٹ (ترقیاتی)2کروڑ5لاکھ76ہزار روپے، لوکل ٹیکسز فیس اور ریٹ کی مد سے 4کروڑ30لاکھ 78ہزار روپے ذرائع آمدن ہونگے جبکہ متوقع اخراجات ،غیر ترقیاتی اخراجات ،تنخواہ و پنشن اور سائر اخراجات پر مشتمل ہونگے۔تمام غیر ترقیاتی اخراجات کوپوراکرنے کیلئے ششماہی بجٹ میں 12کروڑ 85لاکھ 80ہزار روپے مختص کئے گئے ہیں۔ عملہ کی تنخواہ کیلئے 6کروڑ61لاکھ24ہزار روپے ،ریٹائرڈ ملازمین کی پنشن کیلئے2کروڑ50لاکھ روپے جبکہ بل بجلی و ٹیلی فون،پٹرول،مرمت مشینری اور دیگر سائر اخراجات پورا کرنے کیلئے 5کروڑ46لاکھ روپے رکھے گئے ہیں جبکہ حکومت پنجاب کی جانب سے 2کروڑ5لاکھ76ہزار روپے ترقیاتی کاموں کیلئے دیئے جائیں گے جس کے بعد ترقیاتی کاموں کا آغاز کر دیا جائے گا۔ میلسی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق میونسپل کمیٹی میلسی کے بجٹ اجلاس میں چیئرمین توصیف احمدخان یوسفزئی نے 10کروڑ -64-لاکھ 48ہزار 794سوروپے کا ششماہی بجٹ پیش کیاجسے بحث ومباحثہ کے بعد کثرت رائے سے منظورکرلیا گیااپوزیشن ارکان کی بھی تائیدجبکہ(ن)لیگی کونسلرراوٗ اکبرعلی کی شدیدمخالفت بجٹ کے حق میں ووٹ نہ دیا ۔کنوینر وائس چیئرمین بلدیہ مہر عبدالخالق ارائیں کی صدارت میں منعقدہ اجلاس میں چیئرمین میونسپل کمیٹی توصیف احمد خان یوسفزئی نے،بجٹ پیش کرتے ہوئے اپنی تقریر میں بتایا کہ مالی سال 2016-17 کے آخری 6ماہ یکم جنوری تا30 جون تک آمدنی کا کل تخمینہ 10کروڑ 64لاکھ48ہزار794روپے لگایا گیا ہے جس میں ایم سی کے اپنے وسائل مشتہیر ٹیکس ،تفریحی ٹیکس لائسنس فیس ،بلڈنگ فیس ،کمرشلائزیشن فیس ،سلائر ہاؤس فیس نقل فیس کرایہ دکانات ،وغیرہ سے مجموعی طور پر5کروڑ 59لاکھ25ہزار544روپے کی آمدنی ہوگی جبکہ پی ایف سی اور یو آئی پی کی مد میں حکومت پنجاب کی جانب سے 5کروڑ 5لاکھ 23ہزار250روپے کی گرانٹ متوقع ہے انہوں نے کہاکہ اخراجات کی مد میں 4کروڑ 67لاکھ 52ہزار 955روپے ملازمین کی تنخواہوں کی مدمیں 2کروڑ 33لاکھ 20ہزار کی رقم سائر اخراجات قومی تہواروں اور دیگر سرگرمیوں کیلئے 30لاکھ روپے ترقیاتی اخراجات کی مد میں 3کروڑ 7لاکھ 39ہزار 750روپے مختص کئے گئے ہیں جن میں سے ایک کروڑ 86لاکھ 60ہزار 544روپے جاری و سابقہ ترقیاتی سکیموں کی ادائیگی جنکہ ایک کروڑ 86لاکھ 78ہزار 750روپے آئند ہ ترقیاتی سکیموں کیلئے مختص کیئے گئے ہیں۔ خان گڑھ سے نامہ نگار کے مطابق میونسپل کمیٹی خان گڑھ نے 2.23,18000 کا بجٹ رواں مالی سال 2017 کی باقی مدت کے لئے منظور کر لیا بجٹ میں ترقیاتی کاموں کے لئے 51,00,000 روپے رکھے گئے ہیں جو کہ کل اخراجات کا 23فیصد بنتا ہے ۔ اجلاس کا آغاز ہوتے ہی اپوزیشن ارکان کا بائیکاٹ ۔میونسپل کمیٹی خان گڑھ میں آج بجٹ اجلا س منعقد ہوا جس کی صدارت وائس چیئرمین میونسپل کمیٹی سید طاہر عباس شاہ نے کی اجلاس میں رواں مالی سال کی باقی مدت کے لئے بجٹ پیش کیا گیابجٹ پیش کرتے ہوئے چیئرمین میونسپل کمیٹی خان گڑھ شیخ حاجی محمد لیاقت علی قریشی نے بتایا کہ یہ بجٹ بمطابق ہدایات لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2013لوکل گورنمنٹ بجٹ رولز 2017مرتب کیا گیا ہے اور یہ میونسپل کمیٹی خان گڑھ کا پہلا ششماہی بجٹ ہے جس کا مقصد عوام کو بنیادی ضروری سہولتیں فراہم کرنا ہے انہوں نے کہا کہ میونسپل کمیٹی خان گڑھ ایک فلاحی ادارہ ہے جس کا مقصد پکی گلیاں ،سٹی ایریا میں سڑکوں کی تعمیر ،علاقہ میں بہترین سیوریج کی فراہمی سمیت دیگر کام ہیں انہوں نے بتایا کہ میونسپل کمیٹی خان گڑھ میں صفائی کا عملہ ناکافی ہے اس مقصد کے لئے حالیہ بجٹ میں سنیٹری ورکرز کی 40 عدد اسامیاں شامل کی گئی ہیں اور میونسپل کمیٹی ھذا کو اپنے تمام محاصل بشمول حکومتی گرانٹ سے حاصل ہونے والی آمدنی کا کل تخمینہ برائے سال 2017مبلغ 2,15,18000,روپے لگایا گیا ہے جوکہ رواں سال کا محفوظ سرمایہ شامل کر نے کے بعد کل مبلغ ۔2,23,18000روپے بنتا ہے ۔جبکہ اخراجات کا کل تخمینہ مبلغَ ۔2,09,75,500روپے لگایا گیا ہے انہوں نے بتایا کہ تخمینہ اخراجات مرتب کرتے وقت حکومتی ہدایات کے مطابق غیر ضروری اخراجات سے اجتناب کیا گیا ہے اور غیر ترقیاتی اخراجات کے لئے تخمینہ مبلغ۔ 93,90,000روپے لگایا گیا ہے جو کہ کل خراجات کا 44.78فیصد بنتا ہے ۔سائر اخراجات کا تخمینہ مبلغ ۔59,85,500لگایا گیا ہے جو کہ کل اخراجات کا 28.54فیصد بنتا ہے سائر اخراجات حکومت کی طرف سے طے شدہ نظم ونسق پر سختی سے عملدر آمد کرتے ہوئے کئے جائیں گے انہوں نے بتایا کہ مرمتیں اور دیکھ بھال کے لئے کل 5,00,000روپے رکھے گئے ہیں جو کہ کل اخراجات کا 2.38فیصد بنتا ہے۔ راجن پور سے نمائندہ پاکستان ‘ نامہ نگار کے مطابق میونسپل کمیٹی راجن پور کا پہلے بجٹ اجلاس میں 6کروڑ 36لاکھ 86ہزار 8سو روپے کا چھ ماہ کا بجٹ منظور کر لیا گیا ۔اجلاس کی صدارت کنوینئر /وائس چیئر مین چوہدری نعیم ثاقب نے کی ۔اس موقع پر چیئرمین میونسپل کمیٹی کنور کمال اختر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سترہ سال بعد میونسپل کمیٹی راجن پور کا قیام شروع ہوا ہے ۔اختیارات کی نچلی سطح پر منتقلی کا عمل پنجاب حکومت کی عوام دوستی کا ثبوت ہے ۔وزیر اعلیٰ پنجاب کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ہم سب مل کر اس میونسپل کمیٹی کو ضلع کی بلکہ پنجاب کی مثالی میونسپل کمیٹی بنائیں گے۔ہمارا مقصد عوام کی خدمت اور ان کے مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کرنا ہے ۔آپ سب کے تعاون سے یہ خدمت کا جذبہ جاری رکھیں گے ۔کنوینئر /وائس چیئر مین چوہدری نعیم ثاقب نے بتایا کہ شہر کی صفائی گلیوں اور سڑکوں کی مرمتی ،پارکس اور اسٹیڈیم ،سٹریٹ لائٹ جیسے مسائل درپیش ہیں ان کو ہم سب مل کر انشاء اللہ حل کریں گے ۔انہوں نے بتایا کہ ترقیاتی کاموں کے لئے 72لاکھ روپے مختص کئے گئے ہیں۔ملازمین کی تنخواہیں اور غیر ترقیاتی کاموں کے لئے 1کروڑ 12لاکھ 8ہزار 5سو روپے رکھے گئے ہیں۔ رحیم یار خان سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق میونسپل کمیٹی رحیم یارخان کا سالانہ بجٹ اجلاس کنوینئر عبدالطیف بھٹی کی زیرصدارت جناح ہال میں منعقد ہوا جس میں چیئرمین میاں اعجازعامر نے بجٹ تقریر کرتے ہوئے سال 2016-17ء کا بجٹ پیش کیا۔ بجٹ تفصیلات کے مطابق لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013ء کے تابع یکم جنوری 2017ء سے معرض وجود میں آنیوالی میونسپل کمیٹی کے 30جون 17ء تک 6ماہ کی آمدنی بشمول گورنمنٹ گرانٹ کا تخمینہ 39 کروڑ 81 لاکھ 12 ہزار 5سو روپے لگایاگیا ہے۔ تنخواہوں ‘ پنشن اور دیگر غیر ترقیاتی اخراجات کیلئے 30 کروڑ 47لاکھ 84ہزار روپے کا بجٹ مختص کیاگیا ہے جبکہ ترقیاتی اخراجات کیلئے 7کروڑ 60لاکھ روپے رکھے گئے ہیں جن میں سے 3 کروڑ 70لاکھ روپے سے ترقیاتی سکیمیں مکمل کی جائیں گی جبکہ 3کروڑ 90لاکھ روپے پنشن کی رقم کی کمی پورا کرنے کیلئے پنشن اکاؤنٹ میں منتقل کئے جائیں گے۔ چیئرمین میاں اعجازعامر نے ہاؤس کے ممبران سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت شہر کی ترقی اور خوبصورتی کیلئے ان کے سب سے بڑے اہداف میں ناجائز تجاوزات کا خاتمہ‘ صحت وصفائی‘ ٹریفک پلاننگ اور گلی محلے کی سطح پر سڑکوں کی تعمیر سمیت دوسری بنیادی سہولتوں کی فراہمی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر