مصطفی آباد کے شخص کو قتل کرنے کے ملزم کو سزائے موت اور 2لاکھ جرمانہ

مصطفی آباد کے شخص کو قتل کرنے کے ملزم کو سزائے موت اور 2لاکھ جرمانہ

لاہور(نامہ نگار )ایڈیشنل سیشن جج سیف اللہ سوہل نے مصطفی آباد کے تنویراحمد کو قتل کرنے کے ملزم مدثر کو سزائے موت اور 2لاکھ روپے جرمانے کی سزا کا حکم سنا دیا جبکہ مقدمہ میں شریک دوخواتین سمیت 3ملزمان کو شک کی بنا ء پربری کردیا ہے ۔عدالت میں تھانہ مصطفی آباد پولیس نے تنویراحمد کو قتل کرنے کے الزام میں ملزم مدثراس کے سگے بھائی مظفرحسین کے علاوہ دو خواتین حاجراں بی بی اور ثمینہ کے خلاف چالان پیش کیا ، ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نے معمولی جھگڑے پر چھری اور ڈندے سے حملہ کرکے تنویراحمد کو شدید زخمی کیا جو بعد میں ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیاتھاجس کے بعد پولیس نے قتل کا مقدمہ درج کرنے کے بعد تفتیش مکمل کرکے چالان عدالت میں پیش کردیا تھا، عدالت میں چالان آنے پر فاضل جج نے باقاعدگی سے کیس کی سماعت کی ، گزشتہ روز عدالت نے وکلاء اورفریقین کے دلائل سننے کے بعد مجرم مدثر کو سزائے موت اور 2لاکھ روپے جرمانے کی سزا کا حکم سنا دیا ہے جبکہ اس کے بھائی مظفرحسین ،حاجراں بی بی اور ثمینہ بی بی کو شک کا فائدہ دیتے ہوئے بری کردیاہے۔

 

مزید : علاقائی