نئے تعلیمی سال سے پرائمری پرٹرائنگ کا مضمون کورس میں شامل کرنا منفرد منصوبہ ہے : محمد عاطف

نئے تعلیمی سال سے پرائمری پرٹرائنگ کا مضمون کورس میں شامل کرنا منفرد منصوبہ ...

 پشاور (سٹاف رپورٹر) صوبائی وزیر ابتدائی و ثانوی تعلیم محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ صوبے کے سرکاری سکولوں میں ساتویں تا نویں جماعت میں ارلی ایج پروگرامنگ کا آغاز اورنئے تعلیمی سال سے پرائمری سطح پر ڈرائنگ کا مضمون کورس میں شامل کرنا حکومت خیبر پختونخواکے منفرد منصوبے ہیں جو ملک کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سرکاری سکولوں میں متعارف کئے جا رہے ہیں جن سے بچوں کی تخلیقی صلاحیتوں کو اُجاگر کرنے اور آگے بڑھنے میں مدد ملے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز پشاور میں پرائمری سکولوں کے بچوں کیلئے "قائد سے باتیں" کے عنوان سے اینمیٹڈ ویڈیوز پروگرام کے مفاہمتی یاداشت پر دستخط کرنے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیااس موقع پر سیکرٹری تعلیم ڈاکٹر شہزاد بنگش اور دیگر متعلقہ حکام بھی موجود تھے مفاہمتی یاداشت پر محکمے کی جانب سے سپیشل سیکرٹری تعلیم قیصر عالم جبکہ غیرسرکاری تنظیم کی جانب سے دانیال نورانی نے دستخط کئے۔ اس پروگرام کا مقصد نئی نسل کو بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کے فرمودات سے اینمیٹڈ ویڈیوز کے ذریعے آگاہ کرنا ہے ۔ وزیر تعلیم نے کہا کہ نئی نسل کو قائد اعظم کے فرمودات سے آگاہ رکھنا وقت کی ضرورت ہے کیونکہ آ ج کے پاکستان میں اُن کے فرمودات سے عدم آگہی کی وجہ سے کرپشن جیسے ناسور کو پروان چڑھا ہے انہوں نے کہا کہ تعلیم کے ساتھ ساتھ بچوں کی اخلاقی تربیت کیلئے اس قسم کے مفید پروگرام شروع کرینگے۔عاطف خان نے کہا کہ صوبائی حکومت شعبہ تعلیم میں انفارمیشن ٹیکنالوجی سے زیادہ سے زیادہ مستفید ہونے کیلئے عملی اقدامات اُٹھا رہی ہے اور اب تک مختلف سرکاری سکولوں میں 1340 آئی ٹی لیب قائم کرچکی ہے اور مذید 500 سکولوں میں آئی ٹی لیب قائم کئے جا رہے ہیں اسی طرح 1500 سے زیادہ سرکاری سکولوں میں انٹرایکٹیو وائٹ بورڈ لگانے کا پروگرام ہے جن میں سے 500 سے زیادہ سکولوں میں یہ بورڈ نصب کئے جا چکے ہیں انہوں نے مذید کہا کہ سکولوں میں قائم آئی ٹی لیب سے زیادہ زیادہ استفادہ حاصل کرنے کیلئے انہیں سیکنڈ شفٹ میں کمیونٹی کیلئے کھولنے کی ہدایت کی گئی ہے۔انہوں نے متعلقہ حکام سے کہاکہ وہ سرکاری سکولوں کو ہر لحاظ سے ماڈل بنانے کیلئے مفید اور قابل عمل پروگرام تیار کرائیں اور اس سلسلے میں نجی شعبہ سے بھی معاونت حاصل کریں۔

مزید : کراچی صفحہ اول